Friday, January 27, 2023

اسرائیل فلسطین اور اردن کے علاقوں کے انضمام سے باز رہے، اقوام متحدہ، عرب لیگ

اسرائیل فلسطین اور اردن کے علاقوں کے انضمام سے باز رہے، اقوام متحدہ، عرب لیگ
قائرہ (92 نیوز) اقوام متحدہ اور عرب لیگ نے اسرائیل کو 1967 کی جنگ میں حاصل کئے گئے فلسطین اور اردن کے علاقوں کے انضمام سے خبردار کر دیا، امریکا نےمنصوبے پر عملدرآمد کیلئے اسرائیل کو گرین سگنل دے دیا ہے۔ اسرائیلی حکومت نے 1967 کی جنگ میں حاصل کئے گئے فلسطین اور اردن کے علاقوں کو اپنی ناجائز ریاست میں ضم کرنے کا منصوبہ بنا رکھا ہے، یکم جولائی سے باقاعدہ اقدامات اٹھائے جانے کا امکان ہے۔ اسرائیلی منصوبے کے باعث دنیا بھر، خصوصاً مسلمان ممالک میں خاصہ اضطراب پایا جاتا ہے، اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل کے ورچوئل اجلاس میں اسرائیلی منصوبے اوراس کے ممکنہ اثرات پر تفصیلی تبادلہ خیال  بھی کیا گیا ہے۔ اجلاس سے ویڈیولنک کے ذریعے خطاب میں اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیوگوتریس نے اسرائیل کو خبردار کیا کہ مغربی کنارے کی مزید زمین ہتھیانے سے باز رہے، منصوبے پرعملدرآمد عالمی قوانین کی سنگین خلاف ورزی اور دو ریاستی حل کی کوششوں کو شدید نقصان کا خدشہ ہے۔ عرب لیگ کے سربراہ احمد ابوالغیط نےکہا کہ منصوبے پر عمل ہوا تو ممکنہ جنگ سے نا صرف خطے کا مستقبل داؤ پر لگے گا، بلکہ عالمی سکیورٹی کیلئے بھی خطرات جنم لیں گے۔ دوسری جانب امریکی سیکرٹری خارجہ مائیک پومپیونے اسرائیل کومنصوبے پر عملدرآمد کیلئے گرین سگنل دے دیا ہے، پومپیو کا کہنا تھا کہ مذکورہ علاقوں کو اسرائیل میں ضم کرنا یا نہ کرنا اسرائیل کا دائرہ اختیار ہے۔ اس سے قبل 25 یورپی ممالک کے ایک ہزارسے زائد ارکان پارلیمنٹ نے اسرائیلی منصوبے کو مسترد کرتے ہوئے اپنے رہنماؤں سے مطالبہ کیا کہ اسرائیل کو فلسطین اور اردن کے مزید علاقوں کو ضم کرنے سے روکنے کیلئے سنجیدہ اقدامات اٹھائے جائیں۔