Thursday, December 1, 2022

اسرائیلی فوجی نے فلسطینی سمجھ کر اپنے ہی شہری کو گولی مار دی

اسرائیلی فوجی نے فلسطینی سمجھ کر اپنے ہی شہری کو گولی مار دی
یروشلم (ویب ڈیسک) یروشلم میں ایک اسرائیلی فوجی کی فائرنگ سے ایک یہودی شہری ہلاک ہوگیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق یہ دونوں افراد ایک دوسرے کو فلسطینی حملہ آور سمجھے تھے اور آپس میں لڑ پڑے تھے۔ مقامی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ اسرائیلی شہری نے وسطی یروشلم میں ایک بس پر سوار ہونے والے دو اسرائیلی فوجیوں کو یہ سمجھ کر روکا کہ وہ حملہ آور ہیں۔ پولیس کے مطابق فوجی بھی اس شخص کو حملہ آور سمجھے اور اس سے خود کو شناخت کروانے کو کہا۔ شہری کے انکار پر ان کی لڑائی ہوئی اور اس دوران جب مذکورہ شہری نے ایک فوجی کی بندوق پر ہاتھ ڈالا تو دوسرے فوجی نے اسے گولی مار دی۔ خیال رہے کہ یہ حالیہ چند دنوں میں کسی فرد کو غلطی سے حملہ آور سمجھ کر ہلاک کیے جانے کا دوسرا واقعہ ہے۔ اس سے پہلے چند روز قبل بھی ایک بس اڈے پر حملے کے دوران وہاں تعینات محافظ نے اریٹیریا کے ایک شہری کو حملہ آور کا ساتھی سمجھ کر گولی مار دی تھی جس کے بعد وہاں موجود عام شہریوں نے اسے تشدد کا نشانہ بھی بنایا اور وہ زخموں کی تاب نہ لا کر چل بسا تھا۔ واضح رہے کہ رواں ماہ تشدد کے سلسلہ وار واقعات میں آٹھ اسرائیلی اور حملہ آوروں سمیت 40 سے زیادہ فلسطینی ہلاک اور درجنوں افراد زخمی ہو چکے ہیں۔