Friday, January 28, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

احتجاج سے تنگ حکومت نے ڈنڈا اٹھا لیا،  تمام یونیز تحلیل ،ہڑتال کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی ہو گی

احتجاج سے تنگ حکومت نے ڈنڈا اٹھا لیا،  تمام یونیز تحلیل ،ہڑتال کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی ہو گی
February 1, 2016
اسلام آباد(92نیوز) وزیر اعظم نواز شریف نے پی آئی اے میں لازمی سروس ایکٹ نافذ کرنے کی منظوری دے دی ہے، ایکٹ کے نفاذ کے بعد پی آئی اے میں تمام یونیز تحلیل کر دی گئی ہیں، اور اب کوئی بھی ملازم ہڑتال نہیں کر سکے گا، جو ہڑتال کرے گا گھر جائے گا۔ تفصیلات کےمطابق حکومت نے پی آئی اے کی نجکاری کے خلاف احتجاج کرنے والے اور فلائٹس آپریشنز بند کرنے کی دھمکی دینے والے ملازمین کے خلاف بلآخر ڈنڈا اٹھا لیا ہے اورکہا ہے کہ اب ہڑتال ہو گی نہ فلائٹ آپریشن بند ہونگے کیوںکہ پی آئی اے میں لازمی سروسز ایکٹ 1952 کو لاگو کر دیا گیا ہے جس کی وزیر اعظم نواز شریف نے منظوری دے دی ہے۔ ایوی ایشن ڈویژن کی طرف سے 6 ماہ کے لئے قومی ایئر لائن میں لازمی سروسز ایکٹ کے نفاذ کے لئے وزیر اعظم کو سمری بھجوائی  گئی جس پر وزیر اعظم نے دستخط کر دیے،لازمی سروسز ایکٹ کے نفاذ کے بعد اب تمام یونیز تحلیل کر دی گئی ہیں اور ایکٹ کے تحت ہڑتال کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی ہو گی اور انہیں نوکری سے فارغ کر کے گھر بھیجا جا سکے گا۔ حکومت نے پی آئی اے کی جوائنٹ ایکشن کمیٹی اور دیگر تمام یونیز پر واضح کر دیا تھا کہ اگر ہڑتال ختم کی گئی تو حکومت لازمی سروسز ایکٹ کے نفاذ کے لئے مجبور ہوجائے گی۔