Sunday, December 5, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

آرمی چیف کے حکم پر پنجاب میں کریک ڈاون‘ ہزار سے زائد افراد گرفتار

آرمی چیف کے حکم پر پنجاب میں کریک ڈاون‘ ہزار سے زائد افراد گرفتار
March 29, 2016
لاہور (92نیوز) آرمی چیف کے حکم پر پنجاب میں دہشت گردوں کیخلاف بڑا کریک ڈاون جاری ہے۔ لاہور، فیصل آباد، ملتان اور سیالکوٹ سمیت کئی شہروں میں آپریشنز میں ایک ہزار سے زائد افراد کو حراست میں لیا گیا۔ مظفرگڑھ میں 3 اور راجن پور میں 2 دہشت گرد ہلاک کر دیے گئے جبکہ پنجاب حکومت نے کالعدم تنظیموں کے سولہ سو کارکنوں کی فہرست بھی تیار کر لی ہے۔ تفصیلات کے مطابق گلشن اقبال پارک سانحے کے بعد سکیورٹی اداروں نے لاہور کے مختلف علاقوں میں کارروائیاں کیں اور اکیس افراد کو حراست میں لے لیا۔ سیالکوٹ میں ساٹھ افغانیوں سمیت دو سو پچاس مشکوک افراد کو پکڑا گیا۔ ڈسکہ میں مشترکہ کارروائی میں تیرہ جبکہ نارووال میں 6مشتبہ افراد کو حراست میں لیا گیا۔ حسن ابدال کے مختلف علاقوں میں سرچ آپریشن کے بعد کالعدم تنظیم کے چھ کارکنوں کو حراست میں لیا گیا۔ ضلع رحیم یار خان میں چونتیس مشتبہ افراد کو پکڑا گیا۔ قصور سے اٹھارہ مشتبہ افراد حراست میں لئے گئے۔ جھنگ اور چنیوٹ میں جنرل بس سٹینڈز اور ہوٹلز میں مقیم افراد کے کوائف معلوم کیے گئے اور بغیر شناخت کے رہنے والے تمام افراد کو حراست میں لے لیا گیا۔ فیصل آباد میں دہشت گردوں سے تعلق کے شبے میں تیس افراد کوقانون نافذ کرنے والے اداروں نے اپنی تحویل میں لے لیا۔ حافظ آباد کی تحصیل پنڈی بھٹیاں میں پولیس نے سرچ آپریشن کے دوران سترہ افغان باشندوں کو حراست میں لے کر نا معلوم مقام پر منتقل کر دیا۔ سرگودھا میں کالعدم تنظیم کے 2کارندے پکڑے گئے جن کے قبضے سے اسلحہ اور بارودی مواد بھی برآمد ہوا ہے۔ گوجرانوالہ میں حساس اداروں نے اٹھہتر افراد کو گرفتار کیا۔ ملتان میں بڑا کریک ڈاو¿ن ہوا اور مختلف علاقوں سے ستر افراد گرفتار کئے گئے۔ مظفر گڑھ سے فورتھ شیڈول میں شامل 4 دہشت گرد پکڑے گئے۔ خانیوال اور کبیروالہ سے بھی مشکوک افراد کو حراست میں لیا گیا۔ رحیم یار خان سے بارہ اورمیانوالی سے گیارہ افراد گرفتار ہوئے جن کے قبضے سے اسلحہ بھی برآمد ہوا۔ دوسری جانب پنجاب حکومت نے کالعدم تنظیموں کے سولہ سو کارکنوں کی فہرست تیار کرلی ہے جن کے خلاف کارروائی کسی بھی وقت ہو سکتی ہے۔