ڈی آئی جی خادم حسین اور ایس پی شکار پور ڈاکٹر رضوان احمد کے تبادلوں کا نوٹیفکیشن معطل


۱۶ دسمبر, ۲۰۱۹ ۴:۵۹ شام

 کراچی (92 نیوز) سندھ پولیس کے دو افسروں کے تبادلوں کا معاملہ سندھ ہائیکورٹ پہنچ گیا۔ عدالت نے ڈی آئی جی خادم حسین اور ایس پی شکار پور ڈاکٹر رضوان احمد کے تبادلوں کا نوٹیفکیشن معطل کر دیا۔

سندھ پولیس اورصوبائی حکومت کے درمیان اختیارات اور لفظی جنگ جاری ہے۔ جیالے وزرا نے سندھ پولیس پر نیا اور حیران کن الزام دھر دیا اور کہا منتخب صوبائی حکومت کے خلاف سازش میں پولیس افسران ملوث ہیں۔

جیالے وزیر بولے صوبائی حکومت کی اتھارٹی کو چیلنج کیا گیا ہے۔ آئی جی کو سیاست کا شوق ہے تو میدان میں آجائیں۔ پولیس افسر ڈاکٹر رضوان پر بھی الزام لگائے۔

سول سوسائٹی کی درخواست پر سندھ ہائیکورٹ نے پولیس افسران خادم رند اور ڈاکٹر رضوان کو سندھ سے تبادلہ کرنے کا نوٹیفکیشن منسوخ کر دیا۔ امکان ہے کہ دونوں افسران جلد دوبارہ اپنے عہدوں کی ذمہ داری سنبھال لیں گے۔

وزیر اطلاعات سندھ سعید غنی نے عدالتی فیصلے پر کہا کہ ایسے فیصلے پورے ملک میں ہونا چاہیئں۔ پنجاب میں بھی آئی جی اور ڈی پی او بدلے لیکن کوئی بات نہیں ہوئی۔

سندھ پولیس افسران اور صوبائی حکومت کے درمیان کئی روز سے انتظامی فیصلوں پر جاری جنگ کا نقصان تمام اسٹیک ہولڈرز کو ہو رہا ہے۔ امکان ہے کہ دونوں جانب سے مزید کئی فیصلے اور خطوط سامنے آئینگے۔

تازہ ترین ویڈیوز