ڈپٹی اسپیکر کیخلاف اپوزیشن کی تحریک عدم اعتماد،رواں ہفتے ووٹنگ کا امکان

۱۲ نومبر, ۲۰۱۹ ۳:۰۳ شام

اسلام آباد ( 92 نیوز) ڈپٹی اسپیکر کے خلاف اپوزیشن کی تحریک عدم اعتماد کی قرارداد پر جمعرات یا جمعہ کو ووٹنگ کا امکان ہے ،  فریقین متحرک ہو گئے ۔ وفاقی وزیر فواد چودھری نے اپوزیشن سے تحریک واپس لینے کی استدعا کر دی ،  ڈپٹی اسپیکر تحریک کی ناکامی پر امید ہیں  جب کہ  اپوزیشن کو 172 ووٹ درکار ہیں ، مینگل گروپ اور ناراض ارکان کا کردار اہم ہوگا۔

ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری کیخلاف اپوزیشن کی تحریک عدم اعتماد کی قرارداد  ووٹنگ کیلئے رواں ہفتے ایوان میں پیش کی جائے گی  ، تحریک کی قرارداد پر ووٹنگ کیلئے 7 دن کا نوٹس آئینی تقاضہ ہے  اس لئے جمعرات یا جمعہ کو ووٹنگ کا امکان ہے ۔

وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے اپوزیشن کو تحریک عدم اعتماد واپس لینے کی استدعا کر دی ، ٹوئٹ میں اپوزیشن کو سیاسی تلخی میں اضافے کا سبب قرار دے دیا کہا کہ جب آپ ناکام ہوتے ہیں تو اداروں کیخلاف مہم جوئی شروع کر دیتے ہیں ، یہ مناسب رویہ نہیں ۔

ادھر ڈپٹی اسپیکر قاسم سوری بھی  تحریک کی ناکامی کیلئے پرامید ہیں ،تحریک عدم اعتماد کی قرارداد پر آئین کے آرٹیکل 53 کی شق 7 کے تحت ووٹنگ خفیہ رائے شماری کے تحت ہوگی  ، ڈپٹی اسپیکر کو ہٹانے کیلئے 172 ووٹ درکار ہوں گے ،ایوان میں حکومت و اتحادی ارکان کی تعداد 183 جبکہ  اپوزیشن کو 156 ارکان کی حمایت حاصل ہے ۔

مینگل گروپ اور ناراض حکومتی ارکان ، علی وزیر اور محسن داوڑ کا کردار اہم ہوگا۔

تازہ ترین ویڈیوز