پی پی رہنما مخدوم احمد محمود کی نوازشریف سے جیل میں ملاقات

نوازشریف سپریم کورٹ طبی بنیادوں درخواست ضمانت چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ مسلم لیگ ن
۱۰ جنوری, ۲۰۱۹ ۶:۱۶ شام

 لاہور (92 نیوز) ن لیگ اور پیپلزپارٹی میں دوریاں کم ہونے لگیں۔ العزیزیہ ریفرنس میں سزا یافتہ نوازشریف سے سابق گورنر پنجاب مخدوم احمد محمود کی نوازشریف سے جیل میں ملاقات ہوئی جس میں سیاسی صورت حال پر بات چیت کی گئی اور نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا۔

ن لیگ کے قائد سے والدہ شمیم اختر ، بیٹی مریم نواز ، جنید صفدر سمیت متعدد لیگی رہنما اور کارکن ملاقات کے لیے پہنچے۔

ذرائع کے مطابق نوازشریف کی والدہ  نے بیٹے کا ماتھا چوما اور آبدیدہ ہوگئیں۔ اسیر والد کے لیے مریم نواز گاجر کا حلوہ ، گوشت ، مٹن پلاؤ اور تازہ پھل لائیں۔

لیگی رہنما اور کارکن بھی حکومت مخالف نعرے لگاتے ہوئے جیل پہنچے اور نوازشریف سے ملاقات کی۔

میڈیا سے گفتگو میں سینیٹر مشاہداللہ کا کہنا تھا کہ نوازشریف ملکی سیاست کو سیدھی راہ پر لانے کی پاداش میں جیل میں ہیں۔ وہ حکومت کو تنقید کا ہدف بنانا نہ بھولے۔

راناثنااللہ نے نوازشریف کی سزا کو انتقام قرار دیا اور کہا نوازشریف احتساب کےعمل سےنہیں بلکہ انتقامی عمل سے گزر رہے ہیں۔

نوازشریف سے مریم اورنگ زیب ، مصدق ملک ، پرویز رشید اور دیگر رہنما بھی کوٹ لکھپت جیل میں ملے۔

تازہ ترین ویڈیوز