پلوامہ واقعے پر بھارتی بوکھلا گئے ، سدھو کو کامیڈی شو سے نکال دیا گیا


نوجوت سنگھ سدھو
۱۶ فروری, ۲۰۱۹ ۶:۳۷ شام

نئی دہلی ( 92 نیوز) پلوامہ واقعے پر بھارتی بوکھلا گئے ، انتہا پسندوں نے پاکستان کے خلاف پراپیگنڈا مہم کا حصہ نہ بننے پر  امن دوست نوجوت سنگھ سندھ و کو  کامیدی شو سے نکال دیا گیا۔

نووجوت سنگھ سدھو نے پلوامہ واقعے کا الزقام پاکستان پر لگانے سے گریز کیا  اور واقعے پر اپنی ہی حکومت کیخلاف سوالات اٹھا دیے ۔

سدھو نے کہا کہ جب کوئی سیاستدان گزرتا ہے تو پوری سڑک بند کر دی جاتی ہے لیکن جب تین ہزار فوجی اہلکار گزر رہے تھے تو سکیورٹی انتظامات کیوں نہ کئے گئے ۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے بغل گیر ہونے کے سوال پر نووجوت سنگھ سدھو نے کہا کہ اس کا کوئی ملال نہیں ، وزیر اعظم نریندر مودی جب لاہور گئے تو وہ بھی نواز شریف سے بغل گیر ہوئے تھے ۔

نووجوت سنگھ سدھو کا کہنا تھا کہ پلوامہ واقعہ کرتارپور راہداری پر اثر انداز نہیں ہونا چاہئے ،اس سلسلے میں بھارتی حکومت پاکستان کیساتھ تعاون جاری رکھے ۔

سدھو کی پاکستان سے محبت کا حوالہ دیتے ہوئے سوشل میڈیا پر ان کے خلاف مہم کا آغاز کیا اور انتہا پسندوں نے کپیل شرما شو سے انھیں نکالنے کا مطالبہ شروع کردیا ۔

انتہاپسندوں کی سخت دھمکیوں کے آگے شو انتظامیہ نے ہتھیار ڈال دیے اور سدھو کو پروگرام سے نکال دیا۔

نوجوت سنگھ سدھو کو پہلی بار انتہاپسندی کا نشانہ نہیں بنایا گیا، اس سے قبل وزیراعظم عمران خان کی تقریب حلف برداری پر بھی انہیں آڑے ہاتھوں لیا گیا تھا۔

پاکستان کی تعریف کرنے پر ایک انتہا پسند تنظیم نے ان کے سر کی قیمت بھی مقرر کر رکھی ہے۔

تازہ ترین ویڈیوز