پاکستان دہشتگردی کیخلاف جنگ لڑرہا ہے ، بھارت نہیں ، امریکی صدر


پاکستان دہشتگردی بھارت ‏ ‏ امریکی صدر واشنگٹن ‏ ‏92 نیوز افغانستان ‏ روس ایران ‏ عراق ‏ ترکی ‏ ‏ یورپی ممالک ‏ داعش ‏
۲۲ اگست, ۲۰۱۹ ۹:۱۰ دن

واشنگٹن ( 92 نیوز) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ پاکستان  داعش کے خلاف جنگ لڑرہا ہے بھارت نہیں ، دیگر ممالک بھی داعش کیخلاف میدان میں اتریں  ، ان کی صدارت میں داعش کے دہشت گردوں کا سو فیصد خاتمہ ہوا، نہیں چاہتے کہ افغانستان میں مزید 19سال موجود رہیں، روس، افغانستان، ایران ،عراق  ،ترکی کو بھی یہ جنگ لڑنا ہوگی، یورپی ممالک داعش کیلئے لڑنے والے اپنے شہریوں کو واپس لے ، ورنہ امریکا انہیں یورپی ممالک میں چھوڑ دے گا۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ دیگر ممالک کو بھی ایک دن دہشت گردی کیخلاف جنگ لڑنا ہو گی، انہوں نے یہ بات افغانستان سے انخلا کے تناظر میں کہی۔صحافیوں سے گفتگو کے دوران عراق میں داعش کے دوبارہ طاقت پکڑنے کے سوال پر صدر ٹرمپ نے کہا کہ میری کمانڈ میں فورسز نے دہشت گردوں کی خلافت کا خاتمہ کر دیا ہے ۔ ایک وقت پر روس، افغانستان، ایران، عراق اور ترکی کو بھی اپنی جنگ لڑنا ہو گی۔

انہوں نے کہ اکہ  ایک وقت آئیگا کہ دیگر ممالک کو بھی داعش سے جنگ کرنا ہو گی کیونکہ ہم یہاں مزید 19 سال نہیں رہنا چاہتے ۔ یاد رہے کہ داعش کی مقامی شاخ اسلامک سٹیٹ خراسان پہلی بار 2014 میں افغانستان میں منظر عام پر آئی تھی اور اب ملک کے شمالی علاقوں میں اپنا اثرورسوخ بڑھا رہی ہے ۔

انہوں نے مزید کہا بھارت بھی یہاں پر ہے لیکن وہ نہیں لڑ رہے بلکہ ہم لڑ رہے ہیں، ہمسائے میں پاکستان ہے وہ لڑ رہے ہیں ، امریکہ سات ہزار میل دور ہے ۔ہم نے داعش کے حامی ہزاروں جنگجوؤں کو پکڑ رکھا ہے اور یورپی ممالک کو ان افرادکو واپس لینا ہو گا، اگر یورپ نے ایسا نہ کیا تو ہمارے پاس انہیں ان کے ملکوں میں بھیجنے کے سوا کوئی چارہ نہیں ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ انہیں آئندہ 50 سالوں کیلئے گوانتاناموبے میں بھیجنے اور ان پر پیسے خرچ نہیں کریگا۔

تازہ ترین ویڈیوز