وکلاء کو اشتعال دلانے والا ڈاکٹر عرفان قتل کیس میں نامزد نکلا


وکلاء ‏ ڈاکٹر عرفان ‏ لاہور ‏ ‏92 نیوز پی آئی سی ‏ متنازعہ ویڈیو ‏
۱۴ دسمبر, ۲۰۱۹ ۹:۴۴ شام

لاہور ( 92 نیوز) پی آئی سی پر حملے سےقبل متنازعہ ویڈیو جاری کر کے وکلاء کو اشتعال دلانے والا ڈاکٹر عرفان قتل کیس میں نامزد نکلا، کئی ماہ گزرنے کےباوجود پولیس نے ڈاکٹر عرفان پرہاتھ نہ ڈالا۔

گزشتہ برس 26 مارچ 2018 کو بہن کی تیمار داری کیلئے آنے والا سنیل نامی نوجوان ڈاکٹروں اور عملے کے تشدد سے دم توڑ گیا، حملے کی وجہ بننے والے ڈاکٹر عرفان اور دیگر عملے کیخلاف مقدمہ درج ہوا، ڈاکٹر عرفان مرکزی ملزم قرارپایا۔

صرف یہی نہیں ڈاکٹر عرفان کئی بار حکومت کو بھی دھمکیاں دے چکے ہیں، چند روز قبل کی ایک ویڈیو بھی سامنے آگئی ہے جس میں ڈاکٹر عرفان حکومت کو تنقید کا نشانہ بنارہے ہیں۔

مقدمہ قتل میں نامزد ہونے والے ڈاکٹر عرفان کو اگر سلاخوں کے پیچھے پہنچادیا جاتا تو نہ وہ وکلاء کے ساتھ صلح نامے کے بعد پی آئی سی کے باہر متنازعہ تقریر کرتے نہ ہی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے۔

تازہ ترین ویڈیوز