وکلاء نے پنجاب بھر میں عدالتوں کا بائیکاٹ کر دیا


وکلاء پنجاب عدالتوں کا بائیکاٹ لاہور ‏ ‏92 نیوز پی آئی سی ‏
12 دسمبر, 2019 2:51 شام

لاہور  ( 92 نیوز) پی آئی سی پر حملہ کرنے والے وکلاء گرفتاریوں کے خلاف ہڑتال پر چلے گئے ، پنجاب بھر میں وکلاء نے عدالتوں کا بائیکاٹ کردیا، کوئی بھی وکیل عدالت میں پیش نہ ہوا ، کئی اہم مقدمات بغیر شنوائی کے ہی ملتوی کرنا پڑے  ، سائلین کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

لاہور ہائیکورٹ بار نے  پی آئی سی حملے کے دوران گرفتاریوں کے خلاف  جنرل ہاؤس اجلاس میں جوائنٹ ایکشن کمیٹی تشکیل دی ، کمیٹی کے سربراہ صدر لاہور ہائیکورٹ بار حفیظ الرحمان نے نامزد چیف جسٹس مامون رشید شیخ سے ملاقات میں گرفتار وکلا کو فوری رہا کرنے کا مطالبہ کیا۔

اوکاڑہ میں ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن کے وکلاءنے گرفتاریوں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا ، وکلا نے کچہری سے ٹینک چوک تک حکومت اور ڈاکٹرز کے خلاف ریلی بھی نکالی، اس دوران شدید نعرہ بازی کی گئی۔

دیپالپو میں تحصیل بار ایسوسی ایشن کے وکلاء نے کچہری سے کچہری چوک تک ریلی نکالی اور گرفتار وکلاء کی رہائی کا مطالبہ کیا۔

کامونکی میں جوڈیشل کمپلیکس کے سامنے وکلاء نے جی ٹی روڈ بلاک کردیا ، اس دوران  ڈاکٹروں اور حکومت کے خلاف نعرے بازی کی گئی ،وکلا کے احتجاج کے باعث جی ٹی روڈ پر ٹریفک کا نظام درہم برہم ہو گیا۔

منڈی بہاؤالدین، شیخوپورہ، قصور سمیت پنجاب کے دیگر شہروں میں  وکلا نے عدالتوں کا بائیکاٹ کیا اور ریلیاں نکالیں ۔ وکلا کے احتجاج کے باعث عدالتوں میں آنے والے سائلین کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔

تازہ ترین ویڈیوز