بھارت کو جواب دینا مجبوری بن چکی تھی ، پھر مذاکرات کی دعوت دیتا ہوں ، وزیر اعظم


۲۷ فروری, ۲۰۱۹ ۲:۱۰ شام

اسلام آباد ( 92 نیوز) وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے ایک مرتبہ پھر بھارت کو مذاکرات کی پیشکش کر دی  اور کہا کہ  آپ ہمارے ملک میں آ سکتے ہیں تو ہم بھی آپ کے ملک میں جا کر کارراوئی کر سکتے ہیں ، جو ہتھیار آپ کے پاس ہیں  وہی ہمارے پاس بھی ہیں ۔

وزیر اعظم عمران خان نے قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ  کل سے جو صورتحال تھی اس پر قوم کو اعتماد میں لینا چاہتا تھا ، بھارت کو جواب دینا ہماری مجبوری بن چکی تھی ، لیکن ایک بار پھر مذاکرات کی دعوت دیتا ہوں ۔

وزیر اعظم نے کہا کہ پم نے پلوامہ واقعے کے بعد بھارت ہر طرح کی تحققیات  کیلئے تعاون کی پیشکش کی تھی ،کسی ملک کو حق نہیں پہنچتا کہ کسی پر الزام دھر کر خود ہی منصف بن کر جارحیت کرے ۔

وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ میں نے بم دھماکوں کے متاثرین کو دیکھا ہے ، کسی کی آنکھ نہیں ، کوئی چلنے سے معذور ہے ، جانتا ہوں مرنے  اور معذور ہو جانے والوں کے خاندان پر کیا گزرتی ہے ، جنگ شروع ہو گئی تو کسی کے کنٹرول میں نہیں رہے گی۔

وزیر اعظم نے کہا کہ پہلی جنگ عظیم مہینوں میں ختم ہونا تھی مگر اسے سالوں لگ گئے ، ضروری ہے یہاں ہم عقل اور حکمت استعمال کریں،بھارت سے کہتا ہوں عقلمندی دکھانا ہو گی۔

تازہ ترین ویڈیوز