وزیر اعظم کا ٹیکس دہندگان کو سہولتیں فراہم کرنے کیلئے پالیسی بنانے کا اعلان

وزیر اعظم ، ٹیکس دہندگان ، سہولتیں، ایف بی آر ، مشاورت ، پالیسی ، اعلان
۱۳ نومبر, ۲۰۱۹ ۸:۲۷ شام

 اسلام آباد (92 نیوز) وزیر اعظم عمران خان نے ٹیکس دہندگان کو سہولتیں فراہم کرنے کیلئے ایف بی آر کی مشاورت سے پالیسی بنانے کا اعلان کر دیا۔

وزیراعظم نے ایف بی آر کے افسروں سے خطاب کرتے ہوئے کہا پاکستان میں چیریٹی دینے والے سب سے زیادہ ہیں۔ ٹیکس کم دینے کی وجہ ایف بی آر ہے، حکومت کو تاریخی خسارے ملے۔ انہوں نے کہا لوگ ایف بی آر پر اعتماد کی بجائے فکسڈ ٹیکس دینے کو تیار ہیں ۔ ایف بی آر والے بتائیں لوگوں کو کیسے اعتماد دیا جا سکتا ہے۔

وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا مسئلہ یہ ہے کہ ہمارے پاس اپنے ملکی وسائل کو بروئے کار لانے کے لیے ہی وسائل نہیں ہیں۔ ہم نے جو ٹیکس اکٹھا کیا اس میں سے آدھا پچھلے قرضے کی مد میں چلا گیا۔ ہمارے لوگوں کے پاس پیسہ بھی ہے اور قوت خرید بھی ہے۔ جب تک ہم ٹیکس دینے کو اپنی ڈیوٹی اور جہاد نہیں سمجھیں گے کام نہیں بنے گا۔

عمران خان بولے ن لیگ اور پیپلزپارٹی کے قائدین اپنے دور اقتدار میں امریکا گئے۔ ایک نے 8 لاکھ ڈالر اور دوسرے نے 7 لاکھ ڈالر خرچ کئے جبکہ میں نے امریکا کا دورہ 65 ہزار ڈالر میں کیا۔ وزیراعظم بولے پچھلی حکومتیں جب چھوٹا کام بھی کرتی تھیں تو بڑے بڑے اشتہارات شائع کراتی تھیں، ہم بڑے بڑے کام کر جاتے ہیں اور اشتہارات شائع نہیں کراتے۔

وزیر اعظم عمران خان نے اپنے خطاب میں کہا اگر لوگوں کو حکومت پر اعتماد نہیں تو لوگ ٹیکس نہیں دیں گے۔ عوام چاہتی ہے حکومت ان کا پیسہ صحیح جگہ خرچ کرے۔ باہر کی حکومتوں پر پریشر ہوتا ہے کہ ٹیکس پیئر کا پیسہ ٹھیک جگہ خرچ کیا جائے۔ ہم عوام کو یہ احساس دلانا چاہتے ہیں کہ ہم آپ کے پیسے کی قدر کرتے ہیں۔

عمران خان نے مزید کہا ایک تھیم سامنے آگئی ہے، ہم جو بھی پالیسی بنائیں گے اس میں ایف بی آر افسران کی پوری مشاورت ہو گی۔ ایف بی آر افسران سے زیادہ کوئی نہیں جانتا کہ عوام کو ٹیکس کے لیے کس طرح سہولیات دی جا سکتی ہیں۔ ایف بی آر افسران اپنی تجاویز ابھی سے تیار کرنا شروع کر دیں، ہم ان پر پوری طرح عمل کریں گے۔

تازہ ترین ویڈیوز