وزیراعظم عمران خان نے ایمنسٹی اسکیم میں توسیع کا عندیہ دے دیا

پاک فوج، ٹیکس، ایمنسٹی اسکیم، وزیراعظم، عمران خان،
۲۸ جون, ۲۰۱۹ ۸:۱۹ دن

 اسلام آباد (92 نیوز) وزیراعظم عمران خان نے ایمنسٹی اسکیم میں توسیع کا عندیہ دے دیا۔ سرکاری ٹی وی پر گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا اگلے 48 گھنٹے میں نیا پروگرام لے کر آئیں گے۔

 وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا ایف بی آر پر لوگوں کا اعتماد نہیں ہے۔ لوگ ٹیکس دینے سے خوفزدہ ہیں۔ ہم نے ایف بی آر میں اصلاحات لانی ہیں۔ اگلے 48 گھنٹے میں نیا پروگرام لے کر آئیں گے۔

انہوں نے کہا ٹیکس نہ دینے سے ہم قرضوں کی دلدل سے نہیں نکل سکتے۔ ہمیں سالانہ 8 ارب خسارے کا سامنا ہے۔ قوم چاہےتو ہم 8 ہزار ارب بڑی آسانی سے اکھٹا کر سکتے ہیں۔ اب قوم کا پیسہ قوم پر خرچ ہو گا ۔

عمران خان بولے انگریز ہم پر حکومت کرتا تھا۔ انگریز نے ہمیں غلام بنا رکھا تھا۔ ہمارے ملک پر ظلم ہوا، ہمارے حکمرانوں کا طرز زندگی انگریز حکمرانوں جیسا تھا۔ انگریز ہمیں برابر کے شہری نہیں سمجھتا تھا۔

وزیر اعظم نے کہا کرپشن کی وجہ سے مہنگائی اور بیروزگاری ہوتی ہے ۔ کرپشن ملک کے ادارے تباہ کر دیتی ہے۔ اشرافیہ کی ٹیکس چوری سے مسائل پیدا ہوتےہیں۔ قانون کی بالادستی سے ملک ترقی کرتا ہے۔

عمران خان کا انٹرویو میں کہنا تھا ہماری حکمران اشرافیہ نے ایف بی آر کو تباہ کیا۔ اس وجہ سے عوام کا ایف بی آر سے اعتبار اٹھ گیا۔ ایف بی آر میں لوگوں کی چھانٹی کرنی ہے۔

انہوں نے کہا شبر زیدی کے ساتھ مل کر کام کروں گا۔ ایمنسٹی اسکیم کے بعد نان فائلر کو غیرقانونی سمجھا جائے گا۔وزیر اعظم بولے ہمارا سب سے بڑا پروگرام غربت کو مٹانا ہے۔ غربت کے خاتمے کیلئے احساس پروگرام لائے ہیں۔ٹیکس کی آدھی رقم سود کی ادائیگی میں چلی جاتی ہے۔ پاکستان میں 20 لاکھ افراد ٹیکس دیتے ہیں۔ پاکستانی دنیا میں سب سے کم ٹیکس دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کئی مغربی ممالک مدینہ کی ریاست کے مطابق چل رہے ہیں۔ چاہتا ہوں کہ ہم ایک سچی قوم بنیں۔

تازہ ترین ویڈیوز