نوازشریف کا نام ای سی ایل سے غیر مشروط طور پر نکالنے کی درخواست قابل سماعت قرار

میڈیکل بورڈ ، طبی معائنے ، نوازشریف ، صحت ، بہتر ، قرار
۱۵ نومبر, ۲۰۱۹ ۹:۳۴ شام

لاہور (92 نیوز) لاہور ہائیکورٹ نے نوازشریف کا نام ای سی ایل سے غیر مشروط طور پر نکالنے کی درخواست  قابل سماعت قرار دے دی، مزید کارروائی کے لئے وفاق، نیب اور وکلا کو طلب کرلیا گیا۔

عدالت نے ریمارکس دیئے تاثر نہیں دینا چاہتے کہ سماعت میں جلدی کی گئی، ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا انسانی بنیادوں پر ہی نواز شریف کیلئے انڈیمنٹی بانڈز کی پابندی لگائی، جلدی تھی تو بانڈز جمع کرا دیتے، معاملہ پیر تک ملتوی کیا جائے۔

وفاقی حکومت اور نیب نے شہبازشریف کی طرف سے درخواست اور عدالت کے دائرہ اختیار پر اعتراض کیا، وفاقی حکومت نے 45 صفحات پر مشتمل شق وار جواب عدالت میں جمع کرایا اور غیر مشروط جانے کی مخالفت کی۔

وفاقی حکومت نے موقف اپنایا نواز شریف کا نام نیب کے کہنے پر ای سی ایل میں ڈالا گیا، نیب نے کہا لاہور ہائیکورٹ کو سماعت کا اختیار نہیں، ای سی ایل سے نام نکالنا وفاق کا کام ہے، سزایافتہ شخص کوپیش کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے۔

شہبازشریف کے وکیل نے کہا لاہور ہائیکورٹ سماعت کا اختیار رکھتی ہے، کئی فیصلے ہمارے موقف کی تائید کرتے ہیں، پرویز مشرف کا نام بھی ای سی ایل سے نکالنے کی مثال موجود ہے،وکیل نے کئی فیصلوں کی کاپیاں بھی پیش کر دیں۔

امجد پرویز ایڈووکیٹ نے نواز شریف کا وکالت نامہ بھی پیش کر دیا، اس پر جسٹس علی باقر نجفی نے وفاق کا موقف مسترد کرتے ہوئے ریمارکس دیئے ہم ایسے شخص کا کیس سن رہے ہیں جو کافی بیمار ہے۔

تازہ ترین ویڈیوز