نندی پور پاور پراجیکٹ کیس ، بابر اعوان ، راجہ پرویز اشرف پر فرد جرم عائد

بابر اعوان ، راجہ پرویز اشرف
۱۱ مارچ, ۲۰۱۹ ۲:۵۲ شام

راولپنڈی(92 نیوز ) نندی پور پاور پراجیکٹ کیس میں بابر اعوان ، سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف  سمیت 7 ملزموں پر فرد جرم عائد کر دی گئی ۔

پاکستان پیپلزپارٹی کی وفاقی حکومت کے دور کے وزیر قانون  بابر اعوان  اور وزیر اعظم راجہ  سمیت تمام ملزموں نے نندی پور پاور پراجیکٹ کیس میں  صحت جرم سے انکار کر دیا۔

احتساب عدالت راولپنڈی نے  نندی پور پاور پراجیکٹ سے متعلق کیس روزانہ کی بنیاد پر چلانے کا فیصلہ  کرتے ہوئے شہادتیں طلب کر لیں ۔

احتساب عدالت کے جج ارشد ملک نے ملزمان پر فرد جرم پڑھ کر سنائی کہ نندی پور پاور پراجیکٹ میں تاخیر کے باعث قومی خزانے کو 27 ارب کا نقصان پہنچا ، آپ نے جان بوجھ کر منصوبے میں تاخیر کی،کیا استغاثہ کے الزامات کو تسلیم کرتے ہیں۔

جس پر سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف، تحریک انصاف کے رہنما بابر اعوان سمیت ساتوں ملزمان نے صحت جرم سے انکار کردیا۔

عدالت نے ملزم بابراعوان کی روزانہ کی بنیاد پر کیس چلانے کی استدعا منظور کرلی۔عدالت نے قرار دیا کہ اس ریفرنس کو جلد سے جلد نمٹایا جائے گا۔

عدالت نے آئندہ سماعت پر استغاثہ کے وزارت پانی و بجلی سے تعلق رکھنے والے اہم گواہ محمد نعیم کو طلب کرلیا۔

سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف نے فرد جرم عائد ہونے پر رد عمل دیتے ہوئے کہا کہ  آج فرد جرم عائد ہوئی ،ہم نے صحت جرم سے انکار کیا ہے، لفظ فرد جرم کا تاثر کافی بڑا ہوتا ہے ۔

فرد جرم عائد ہونے سے متعلق سوال پر بابر اعوان کا کہنا تھا چھوڑیں فرد جرم کو ، آج اللہ کی رحمت  برس رہی ہے ، آج بارش ہو رہی ہے اور پانی زندگی ہے۔

نندی پور ریفرنس پر آئندہ  ریفرنس پر  19 مارچ کو ہوگی۔ ن لیگ کے خواجہ آصف اور پیپلزپارٹی کے نوید قمر بھی استغاثہ کے گواہان میں شامل ہیں۔

تازہ ترین ویڈیوز