میرے الفاظ سے ہندوبرادری کی دل آزاری ہوئی تو معذرت خواہ ہوں ، فیاض الحسن

فیاض الحسن
۰۵ مارچ, ۲۰۱۹ ۱۱:۲۴ دن

لاہور ( 92 نیوز) وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ  میرے الفاظ سے اگر ہندو برادری کی دل آزاری ہوئی ہے تو معذرت خواہ ہوں ۔

وزیر اطلاعات پنجاب کا کہنا تھا کہ میں نے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی  ، بھارتی میڈیا اور بھارتی فوج کو مخاطب کیا تھا ، میرا ٹارگٹ قطعی ہندو مذہب اور ہندو برادری نہیں تھا۔

فیاض الحسن چوہان کی اقلیتی برادری کے بارے میں گفتگو پر پی ٹی آئی قیادت نے سخت نوٹس لیا تھا ور وزیراعظم عمران خان نے ناراضی کا اظہار کیا تھا جب کہ  سوشل میڈیا پر بھی شدید تنقیدکا سامنا کرنا پڑا  تھا۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم نے فیاض الحسن چوہان کے ریمارکس کو انتہائی نامناسب قرار دے دیا،کہا  کہ کسی اقلیت کے خلاف مذہبی بنیاد پر ریمارکس برداشت نہیں۔

وزیراعظم کے مشیر نعیم الحق نے فیاض الحسن  چوہان  کے خلاف کارروائی کا عندیہ دیتے ہوئے کہا کہ  ایسے فضول ریمارکس کسی صورت برداشت نہیں کیے جائیں گے۔

اقلیتوں کے حوالے سے بیان پروزیراعظم کے معاون خصوصی زلفی بخاری نے بھی فیاض الحسن چوہان کو آڑے ہاتھوں لیا اور ٹویٹ میں کہا احمقانہ بیان کسی کی  ذاتی رائے ہو سکتی ہے،اقلیتوں کے حوالے سے بیان سے پی ٹی آئی حکومت کا کوئی تعلق نہیں۔

تازہ ترین ویڈیوز