منشیات کی ترسیل کیلئے بچیوں کا استعمال شروع

منشیات ‏ ترسیل ‏ لاہور ‏ روزنامہ 92 نیوز
۰۲ اکتوبر, ۲۰۱۹ ۱۱:۵۵ دن

لاہور (روزنامہ 92 نیوز ) لاہور میں منشیات فروشوں نے قانون نافذ کرنے والے اداروں سے بچنے کے لئے منشیات ڈلیوری کیلئے بچیوں کا استعمال شروع کردیا، اس طریقہ سے اہلکار ان تک پہنچ نہیں پاتے ۔

ذرائع کے مطابق لاہور کے تعلیمی اداروں میں بھنگ ،شراب ،افیون چرس کا استعمال نہیں بلکہ اچھی فیملیز سے تعلق رکھنے والے طلبہ مہنگا نشہ آئس ، کرسٹل اور کوکین استعمال کرتے ہیں ۔

بڑے ڈیلرز لاہور کی بڑی درسکاہوں کے باہر مختلف طریقوں سے مہنگے نشے کی فروخت کر رہے ہیں، ایک اطلاع کے مطابق قانون نافذ کرنے والے اداروں سے بچنے کے لئے ” کمسن بچیوں “کا استعمال کیا جا رہا ہے ، یہ بچیاں نشہ ڈلیور کرتی ہیں۔

سابق ایس ایس پی آپریشن نے بااثر ڈیلرز کی فہرستیں تیار کرا کر آئس ،کرسٹل اور کوکین نشہ فرخت کرنے بڑے و چھوٹے بااثرڈیلرز اور غیر ملکیوں کے خلاف کریک ڈاؤن کر کے انہیں جیلوں میں بھجوایا ، انکے تبادلے کے بعد بچ جانے والے اب آزادی سے تعلیمی اداروں کے باہر اور اندر آئس ،کرسٹل ،کوکین اور دیگر اقسام کی منشیات فروخت کر رہے ہیں۔

لاہور پولیس آپریشنز ونگ نے تعلیمی اداروں کے اطراف کریک ڈاؤن کے نویں روز 94کلو417گرام چرس ،505 گرام زائد ہیروئن، 42گرام آئس ، 580 گرام افیون،09کلو 600گرام بھنگ اور2240لیٹر شراب برآمدکی۔

تازہ ترین ویڈیوز