محکمہ بلدیات سندھ میں ایک کھرب27ارب کی مبینہ بےظابطگی


sindh
04 جولائی, 2020 7:19 شام

کراچی ( 92 نیوز) محکمہ بلدیات سندھ میں 127 ارب روپے کی مبینہ مالی بے ضابطگی اور مبینہ بدعنوانی سامنے آگئی ، بلدیہ عظمی کراچی واٹر اینڈسیوریج بورڈ سمیت دیگر اداروں میں بیس ارب روپے سے زائد کے اخراجات کا ریکارڈ غائب بلدیاتی اداروں نے ستر ارب روپے کے واجبات ہی وصول نہیں کیے۔

محکمہ بلدیات سندھ کے ذیلی اداروں میں ایک کھرب 27 ارب روپے کی مبینہ بے ضابطگی سامنے آگئی ، آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی رپورٹ میں ہوشربا انکشاف کیاگیا میں ایک کھرب ستائیس ارب روپے کی مبینہ بے ضابطگی سامنے آگئی ۔

آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی رپورٹ میں ہوشربا انکشاف کیاگیاکہ محکمہ بلدیات کے مختلف اداروں نے 70ارب روپے کے واجبات ہی وصول نہیں کیے ، بلدیہ عظمیٰ کراچی کے مالی حسابات میں 15ارب روپے سے زائد مبینہ مالی بدعنوانیاں سامنے آئیں ۔

رپورٹ کے مطابق لاڑکانہ ڈویلپمنٹ اتھارٹی میں 277سٹی وارڈن میں 1389،ایس بی سی اے میں 1500سے زائد خلاف بھرتیاں کی گئیں ، لائنز ایریا ری سیٹلمنٹ پراجیکٹ میں جعلی دستخط سے قیمتی پلاٹ کا آکشن،سرکاری خزانے کو 399ملین روپے کا نقصان سندھ کے مختلف بلدیاتی اداروں میں خلاف ضابطہ بھرتیوں کے زریعے سرکاری خزانے کو 2ارب 45کروڑ روپے کا نقصان پہنچایاگیا۔

تازہ ترین ویڈیوز