Sunday, June 20, 2021
٩٢ نیوز انگلش آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
٩٢ نیوز انگلش آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

ماضی میں نمائشی منصوبے شروع کرکے قومی خزانہ لٹایا گیا، وزیراعلیٰ بزدار

ماضی میں نمائشی منصوبے شروع کرکے قومی خزانہ لٹایا گیا، وزیراعلیٰ بزدار
May 3, 2021

لاہور (92 نیوز) وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کہتے ہیں، ماضی میں نمائشی منصوبے شروع کرکے قومی خزانہ لٹایا گیا۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے ارکان قومی وصوبائی اسمبلی سے ملاقاتوں میں گفتگو کرتے ہوئے کہا، ہماری حکومت نے ماضی کی غلط روایت کا خاتمہ کیا ہے۔ عوام کے مسائل کے حل کیلئے منتخب نمائندوں سے مشاورت کا سلسلہ جاری رکھوں گا، ان کی تجاویز کو اہمیت دی جائے گی اور قابل عمل تجاویز پر عملدرآمد ہوگا۔

اُنہوں نے کہا، ڈویلپمنٹ پراجیکٹس کی ہر سطح پر مانیٹرنگ کا میکانزم بنا لیا، اِن پراجیکٹس کی مانیٹرنگ کے خاطرخواہ نتائج سامنے آ رہے ہیں۔ ترقیاتی منصوبے عوام کی ضرورت اور اِن کی بروقت تکمیل بہت اہم ہے، منصوبوں کی نگرانی کا مقصد شفافیت کو یقینی بنانا ہے۔ ڈویلپمنٹ پراجیکٹس میں لوٹ مار قصہ پارینہ ہے، عوام کے خون پسینے کی کمائی  پر کسی کو لوٹ مار کی اجازت نہیں دیں گے۔ کہا کہ، شہر شہر دورے کرکے ترقیاتی منصوبوں کا خود جائزہ لے رہا ہوں۔

عثمان بزداربولے کہ اسکولوں اور ہیلتھ فسلیٹیز کو اپ گریڈ کرکے لوگوں کو ان کی دہلیز پر بنیادی سہولتیں فراہم کریں گے۔ سرکاری احکامات کو زیر التوا ڈالنے والوں کو عہدوں پر رہنے کا کوئی حق نہیں۔ سابق حکمرانوں نے صوبے کے عوام کی اصل ترجیحات کو نظر انداز کیا، شوبازی کرنے کی منفی سیاست دفن ہوچکی ہے، زبانی جمع خرچ کا وقت گزر چکا، اب صرف کام ہوتا ہے اور ہم عمل کرکے دکھاتے ہیں۔

اُنہوں نے مزید کہا، پنجاب میں کسی کے خلاف انتقامی کارروائی نہ کی ہے، نہ ہوگی۔ پنجاب کا مینارٹی ایمپاورمنٹ پیکیج دوسرے صوبوں کیلئے قابل تقلید اقدام ہے۔ گردواروں، مندروں اور گرجا گھروں کی تعمیرو مرمت بھی کی جائے گی۔ اقلیتی برادری کے مذہبی مقامات پر ضروری سہولتوں کی فراہمی یقینی بنائیں گے۔ تحریک انصاف کی حکومت نے کرپشن کے خلاف علم بلند کیا ہے، مختصر عرصے میں مختلف شعبوں میں اصلاحات کر کے نئی مثال قائم کی۔

وزیراعلیٰ عثمان بزدار سے ملاقات کرنے والوں میں صوبائی وزیر انسانی حقوق و اقلیتی امور اعجاز عالم، صوبائی وزیر توانائی محمد اختر ملک، ایم این اے سردار محمد خان لغاری، ارکان پنجاب اسمبلی مہندر پال سنگھ، سلیم اختر اور غلام علی اصغر شامل تھے۔