لاہور میں کم سن ملازمہ ہادیہ ایمان مالکن کے ہاتھوں تشدد کا نشانہ بن گئی

لاہور ، کم سن ، ملازمہ ، ہادیہ ایمان ، مالکن ، تشدد
۱۷ مئی, ۲۰۱۹ ۳:۲۶ شام

 لاہور (92 نیوز) لاہور میں کم سن ملازمہ پر تشدر کا ایک اور واقعہ پیش آیا۔ دس سالہ ہادیہ ایمان مالکن کے ہاتھوں تشدد کا نشانہ بن گئی۔ زرقہ نامی خاتون نے بچی کو لاتوں، مکوں اور وائیپر سے بدترین تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔

تھانہ کاہنہ کی حدود میں واقع ڈی ایچ اے فیزالیون کے سیکٹرون کے ایک گھرمیں دس سالہ ہادیہ ایمان کو مالکن نے لاتوں ،مکوں اور وائپرکی زد پر رکھ لیا۔

ہمسایوں کی اطلاع پر چائلڈ پروٹیکشن بیورو نے بچی بازیاب کروائی۔ اسسٹنٹ ہیلپ لائن چائلڈ پروٹیکشن بیورو کی مدعیت میں مقدمہ درج کر لیا گیا۔ بچی کا کہنا ہے کہ اسے مختلف بہانوں سے تشدد کا نشانہ بنایا جاتا۔

نائنٹی ٹو نیوز کی خبر پر آئی جی پنجاب نے بچی پر تشدد کا نوٹس لیتے ہوئے سی سی پی او لاہور سے فوری رپورٹ طلب کرلی اور ذمہ داروں کے خلاف فوری کارروائی کی ہدایت کر دی۔

تازہ ترین ویڈیوز