Friday, June 18, 2021
٩٢ نیوز انگلش آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
٩٢ نیوز انگلش آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

طاقتور کو قانون کے نیچے لانے کو جہاد سمجھتا ہوں ، وزیراعظم

طاقتور کو قانون کے نیچے لانے کو جہاد سمجھتا ہوں ، وزیراعظم
May 11, 2021

اسلام آباد (92 نیوز) وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے طاقتور کو قانون کے نیچے لانے کو جہاد سمجھتا ہوں۔

وزیراعظم عمران خان نے عوام سے فون پر براہ راست  گفتگو کرتے ہوئے کہا ایک انسانوں کا قانون ہے جدھر قانون کی بالادستی ہے۔ ایک جانوروں کا قانون ہے جہاں طاقتور کی بالا دستی ہے۔ قانون کا مطلب کمزور کو طاقتور سے تحفظ دینا ہوتا ہے۔ بمباری اور جنگیں ہارنے سے قومیں کبھی تباہ نہیں ہوئیں۔ قوم تب تباہ ہوتی ہے جب اس میں انصاف کیلئے اخلاقی جرأت ختم ہو جاتی ہے۔ ملک تب تباہ ہوتا ہے جب سربراہ پیسے چوری کرنا شروع کرتا ہے۔ انہوں نے کہا ایک ہزار ارب ڈالر غریب ملکوں سے ہر سال چوری ہو کر باہر جاتے ہیں۔ غریب ملک مقروض اور امیر ملک امیر ہوتے جارہے ہیں۔

وزیراعظم نے کہا ہماری حکومت عدلیہ کے نظام میں کسی قسم کی مداخلت نہیں کرتی۔ ہم نیب میں مداخلت نہیں کرتے۔ قانون کی بالا دستی چاہتے ہیں۔ طاقتور کو قانون کے نیچے لانے کو جہاد سمجھتا ہوں۔ یہ مافیا کبھی نہیں چاہے گا قانون کی بالا دستی آئے۔ ہر جگہ پر وہ لوگ بیٹھے ہیں جو فائدہ اٹھا رہے ہیں۔ تب تک عظیم قوم نہیں بن سکتے جب تک ملک میں انصاف نہیں قائم کرتے۔ سارے مافیاز کا مقابلہ کر کے اور جیت کر دکھاؤں گا۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا بھارت میں 22 کروڑ لوگ غربت کی لکیر سے نیچے آ گئے ہیں۔ بھارت میں بنگلہ دیش، نیپال، ایران میں کیسز اوپر جارہے ہیں۔ بھارت میں اسپتال بھرے ہیں۔ لوگ  سڑکوں پر مر رہے ہیں۔ آکسیجن کی کمی ہے۔ انہوں نے کہا کورونا کی دو لہروں میں قوم نے ایس او پیز پر تعاون کیا۔ اللہ کے کرم سے کورونا سے اچھی طرح نکل گئے۔ ہمارے کورونا کیسز کی شرح میں اب اضافہ نہیں ہو رہا۔ کیسز تیزی سے اوپر جا رہے تھے وہ اب کنٹرول میں ہیں۔ ملک اور قوم کیلئے ایس او پیز کی تاکید کروں گا۔ عید کی چھٹیوں میں ماسک پہنیں۔

 وزیراعظم نے مزید کہا پانی کا مسئلہ ہمارے سارے بڑے شہروں میں آنے والا ہے۔ ہمارے شہر بہت تیزی سے پھیل رہے ہیں۔ شہروں کے ماسٹر پلان بنا رہے ہیں۔ پاکستان میں پہلی بار چھوٹے طبقے کیلئے گھر بنانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ پہلی دفعہ بینک لوگوں کو گھروں کیلئے قرض دے رہے ہیں۔ بینک سستے قرضے دے رہے ہیں۔ حکومت بھی سبسڈی دے رہی ہے۔ آنیوالے دنوں میں جو لوگ اپنا گھر بنانا چاہتے ہیں ان کیلئے آسانیاں ہو جائیں گی۔