سپریم کورٹ کا 17 نومبر تک نواز خاندان کیخلاف تمام ریفرنسز کا ٹرائل مکمل کرنے کا حکم



۱۲ اکتوبر, ۲۰۱۸ ۱۲:۱۱ شام

اسلام اباد (92 نیوز) سپریم کورٹ نے نواز خاندان کے خلاف نیب ریفرنسز کا ٹرائل مکمل کرنے کیلئے احتساب عدالت کو ایک اور مہلت دے دی۔ 17 نومبر تک تمام ریفرنسز کا ٹرائل مکمل کرنے کا حکم دے دیا۔

نواز خاندان کے نیب ریفرنسز کا ٹرائل مکمل کرنے کیلئے احتساب عدالت کو چھٹی  مہلت مل گئی۔ نیب پراسیکیوٹر کی العزیزیہ ریفرنس کا فیصلہ پہلے سنانے کی احتساب عدالت کو حکم دینے کی استدعا بھی مسترد کر دی گئی۔

احتساب عدالت کی درخواست پر سماعت کے دوران نیب پراسیکیوٹر نے ٹرائل  پر پیشرفت سے آگاہ کیا۔ نوازشریف کے وکیل  خواجہ حارث نے آخری مرتبہ توسیع دینے کی استدعا کی اور کہا ریفرنسز پر سماعت تکمیل کے قریب ہے۔ ایک سال سے ریفرنس کی پیروی کر رہا ہوں۔ عدالت 30 نومبر تک کا مذید وقت دے۔

چیف جسٹس ثاقب نثار  نے خواجہ حارث کی چھ ہفتوں کی مہلت دینے کی استدعا مسترد کر دی اور ریمارکس دئیے احتساب عدالت 17 نومبر تک سارے ریفرنسز کا فیصلہ کرے۔

17 نومبر تک دونوں ریفرنسز کا فیصلہ نہ ہوا تو شکوہ خواجہ حارث سے کریں گے۔ پھر ہفتے اور اتوار کو بھی عدالت میں پیش ہونا ہو گا۔

چف جسٹس نے خواجہ حارث کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ریفرنس جلدی ختم کر کے اپنا ذہنی دباو ختم کریں۔ آپ فارغ ہو کر سپریم کورٹ میں پیش ہو سکتے ہیں۔ یہ وہ کیسز ہیں جس کی وجہ سے دونوں بھائیوں میں تلخی پیدا ہوئی۔ آپ کو پتہ ہے وہ دو بھائی کون ہیں؟۔

سپریم کورٹ نے احتساب عدالت کو دونوں ریفرنسز پر ہفتہ وار کارروائی کی رپورٹ پیش کرنے کی بھی ہدایت کی۔



تازہ ترین ویڈیوز