سپریم کورٹ کا نئی گاج ڈیم کی فوری تعمیر کا حکم


سپریم کورٹ
۰۵ مارچ, ۲۰۱۹ ۳:۳۱ شام

اسلام آباد ( 92 نیوز ) سپریم کورٹ نے نئی گاج ڈیم کی فوری تعمیر کا حکم  دیدیا، وفاق اور حکومت سندھ واپڈا کو فنڈز کی بروقت فراہمی یقینی بنائیں ۔

جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیئے کہ بارشوں کا سارا پانی سمندر میں گر کر ضائع ہوجائےگا ، سندھ حکومت کی کام کرنے کی نیت ہی نہیں ، شاید 2010 کا سیلاب بھول چکی ہے۔عوامی مفاد کے کام ایک دوسرے کے کندھے پر ڈال دئیے جاتے ہیں۔

ڈیم کی تعمیر سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیے کہ نئی گاج ڈیم کی تعمیر کا معاملہ تیس سال سے چل رہا،ہر سال پیسہ مختص ہوتا ہے جو ضائع کر دیا جاتا ہے۔

سپریم کورٹ نے ڈیم کی تعمیر میں تاخیر پر وفاق اور سندھ خکومت پر برہمی کا بھی اظہار کیا۔ جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دئیے کہ سندھ حکومت کو شاید 2010 کا سیلاب بھول چکا ، دوران سیلاب پانی کا سارا بہاؤو نئی گاج  کے مقام پر ہی تھا۔

جسٹس گلزار احمد نے استفسار کیا کہ سندھ حکومت کو آخر مسئلہ کیا ہے؟ ، عوامی مفاد کے کام ایک دوسرے کے کندھے پر ڈال دئیے جاتے ہیں۔

اٹارنی جنرل نے سپریم کورٹ کو بتایا کہ وفاقی حکومت اپنے حصے کے فنڈز دینے پر آمادہ ہے لیکن صوبائی حکومت نے تاحال فنڈز دینے پر جواب نہیں دیا۔

سپریم کورٹ نے ڈیم کی فوری تعمیر کا حکم دیتے ہوئے واپڈا کو فنڈز فراہم کرنے کی ہدایت کردی  ، پلاننگ ڈویژن اور سیکرٹری آبپاشی سندھ سے فنڈز کی فراہمی پر عملدرآمد رپورٹ طلب کر لی جبکہ عدالتی فیصلے پر وزارت قانون سے رائے مانگنے پر کابینہ ڈویژن سے بھی جواب مانگ لیا گیا۔

کیس کی سماعت ایک ماہ بعد دوبارہ ہوگی۔

تازہ ترین ویڈیوز