سندھ کے چودہ اضلاع میں ووٹرز کی تعداد میں کمی

۱۱ اکتوبر, ۲۰۱۷ ۱:۵۱ شام

کراچی (92 نیوز) سندھ کے چودہ اضلاع میں ووٹرز کی تعداد بڑھنے کی بجائے کم ہوگئی۔ ضلع وسطی میں ایک ماہ کے دوران اکتیس ہزار چار سو چار ووٹرز کم ہوگئے جبکہ ملیر اور غربی اضلاع میں ووٹرز کی تعداد میں حیران کن اضافہ ہوگیا۔
ملک بھر میں اٹھارہ سال کے نوجوانوں اور ووٹرز کی تعداد بڑھ رہی ہے مگر کراچی سمیت سندھ کے چودہ اضلاع میں ووٹرز کی تعداد کم ہو گئی۔
کراچی کے ضلع وسطی میں ایک ماہ کے دوران اکتیس ہزار چار سو چار ووٹ کم ہوئے۔
ووٹرز کی تعداد سترہ لاکھ تہتر ہزارنو سو ساٹھ سے کم ہو کر سترہ لاکھ بیالیس ہزار پانچ سو چھپن ہو گئی۔
بدین ، دادو ، مٹیاری ، جنوبی ، شکارپور سمیت چودہ اضلاع میں بھی مرد و خواتین ووٹرز کی تعداد کم ہوئی۔
الیکشن کمیشن کے اعداد وشمار کے دوسرے حیران کن پہلو میں اضافہ بھی ہے۔ ضلع غربی میں ایک ماہ کے دوران سب سے زیادہ تینتس ہزار پانچ سو اکتیس ووٹ بڑھ گئے اور ملیر میں بھی اکیس ہزار دو سو ہندرہ ووٹ کا اضافہ ہوا۔
سیاسی لحاظ سے ضلع وسطی ایم کیو ایم کا مضبوط گڑہ جبکہ ضلع ملیر اور غربی کو پیپلزپارٹی سمیت دیگر جماعتوں کا اثر ورسوخ ہے۔

تازہ ترین ویڈیوز