ساہیوال میں مبینہ مقابلہ، نئی ویڈیو نے سی ٹی ڈی کے جھوٹ کا پول کھول دیا

۲۰ جنوری, ۲۰۱۹ ۱۲:۲۹ شام

 ساہیوال (92 نیوز) ساہیوال میں مبینہ مقابلے کی نئی ویڈیو نے سی ٹی ڈی کے جھوٹ کا پول کھول دیا۔ نئی ویڈیو نے سب کچھ واضح کر دیا۔ گاڑی میں بیٹھے شہری نے موبائل سے فوٹیج بناکر سارا واقعہ بے نقاب کر دیا۔

فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے سی ٹی ڈی اہلکاروں نے خلیل کی گاڑی کو ٹکر مار کر روکا اور سب سے پہلے گاڑی میں سوار بچوں کو اتارا جس کے چند سیکنڈز بعد اہلکاروں نے سیدھی فائرنگ کر دی ۔

اہلکاروں نے گاڑی پر انتہائی قریب سے گولیاں چلائیں جب کہ گاڑی میں موجود ذیشان اور مہر خلیل کی جانب سے جوابی فائرنگ کی گئی نہ کوئی مزاحمت۔

سی ٹی ڈی اہلکاروں کو گاڑی کے قریب کھڑے دیکھا جا سکتا ہے اور روڈ بھی بلاک ہے۔ اہلکاروں نے گاڑی سے کوئی سامان نہیں نکالا۔ فائرنگ کرنے کے بعد سی ٹی ڈی اہلکار بچوں کو ساتھ لے کر چلے گئے۔

گاڑی میں بیٹھ کر سارے واقعے کی موبائل سے فوٹیج بنانے والا شہری بھی  سامنے آگیا۔ فہد بٹ کا کہنا ہے کہ وہ بھی  اوکاڑہ سے ساہیوال جا رہا تھا۔ سی ڈی ٹی اہلکاروں نے اس کے سامنے  گاڑی پر گولیاں برسائیں۔

واقعہ کی ایک اور فوٹیج موجود ہے جس میں سی ٹی ڈی اہلکاروں کو تینوں بچوں کو  پٹرول پمپ پر چھوڑتے اور واپس لے جاتے دیکھا جا سکتا ہے۔

ہلاک افراد کی کار اوکاڑہ ٹول پلازہ سے گزرنے کی سی سی ٹی وی فوٹیج بھی سامنے آگئی۔ متاثرہ گاڑی ٹول پلازہ پر رکی ۔ ٹیکس ادا کیا اور آگے روانہ ہو گئی۔

تازہ ترین ویڈیوز