سانحہ ماڈل ٹاؤن میں فرد جرم لگ چکی، جے آئی ٹی کی کوئی قانونی حیثیت نہیں،رانا ثنااللہ


سانحہ ماڈل ٹاؤن
۲۱ جنوری, ۲۰۱۹ ۴:۱۰ شام

لاہور (92 نیوز) سانحہ ماڈل ٹاؤن  پر بنائی گئی جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم نے  کام شروع کر دیا، جے آئی ٹی کی جانب سے سابق وزیر قانون پنجاب رانا ثنا اللہ کو طلب کیا گیا مگر وہ حاضر نہ ہوئے ۔

رانا ثنا ء اللہ  نے موقف اپنایا کہ پنجاب حکومت نے سیاسی انتقام کی بنا پر جے آئی ٹی بنائی، سانحہ ماڈل ٹاؤن میں فرد جرم لگ چکی ہے، اِس جے آئی ٹی کی کوئی قانونی حیثیت نہیں۔

رانا ثنا اللہ نے کہا کہ  موجودہ حکومت نے پاکستان عوامی تحریک کے کہنے پرجے آئی ٹی بنائی جومسلم لیگ ن کےساتھ بغض رکھتی ہے  ۔

سابق چیف جسٹس ثاقب نثار نےسانحہ ماڈل ٹاؤن کےشہداکے لواحقین کو انصاف دلانے کے لئے پنجاب حکومت کو نئی جے آئی ٹی بنانے کاحکم دیاتھا۔

پنجاب حکومت نے عدالت عظمیٰ کے حکم پر جے آئی ٹی بنائی ۔ جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم سانحہ ماڈل ٹاؤن کی تحقیقات کر کے اپنی رپورٹ پیش کرے گی ۔

تازہ ترین ویڈیوز