سابق وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی مجاہد کامران 10روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے



۱۲ اکتوبر, ۲۰۱۸ ۲:۲۹ شام

لاہور (92 نیوز) احتساب عدالت  نے غیرقانونی بھرتیوں اور اختیارات کے ناجائز استعمال پر سابق وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی مجاہد کامران اور سابق  پانچ رجسٹرارز کو دس روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کر دیا۔

احتساب عدالت نے سابق وی سی پنجاب یونیورسٹی مجاہد کامران کے خلاف غیر قانونی بھرتیوں اور اختیارات کے تجاوز کے کیس کی سماعت کی۔

نیب کی جانب سے مجاہد کامران سمیت چھ ملزموں کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی۔ عدالت نے استدعا منظور کرتے ہوئے ملزموں کا دس روزہ جسمانی ریمانڈ دے دیا۔

مجاہد کامران کے وکیل نےعدالت میں مؤقف اختیار کیا کہ ان کے مؤکل نے کوئی جعلی بھرتی نہیں کی۔ کنٹریکٹ پر رکھے گئے ملازمین کو اے جی آفس سے تنخواہیں جاری کی جاتیں تھیں۔

ڈاکٹر مجاہد کامران کو ہتھکڑیوں میں عدالت پیشی کے لئے لایا گیا تو وکلاء نے ہتھکڑی کھولنے کا مطالبہ کر دیا۔

اس سے پہلے مجاہد کامران کو عدالت میں پیش کیا گیا تو وکلا، طلبہ اور شہریوں نے ان کے خلاف اور حق میں نعرے لگائے۔

پنجاب یونیورسٹی کے سابق وائس چانسلر ڈاکٹر مجاہد کامران کی گرفتاری کے بعد حکومت نے یونیورسٹیز کے وائس چانسلرز کے اختیارات محدود کرنے کا فیصلہ کر لیا ۔



تازہ ترین ویڈیوز