رمضان شوگر ملز ریفرنس میں شہبازشریف اور حمزہ شہباز ملزم نامزد



حمزہ شہباز رمضان شوگر ملز رمضان شوگر ملز انتظامیہ شہباز شریف
۱۱ جنوری, ۲۰۱۹ ۶:۲۹ شام

لاہور (92 نیوز) شریف خاندان کے لئے ایک اور مشکل تیار ہو گئی۔ چنیوٹ میں رمضان شوگر ملز کیس کا ریفرنس مکمل ہو گیا جس میں شہباز شریف اور حمزہ شہباز کو ملزم نامزد کر دیا گیا۔

مسلم لیگ ن کی مشکلات ہیں کہ ختم ہونے کا نام ہی نہیں لے رہیں۔ کرپشن اور مبینہ مالی بے ضابطگیوں کے کیس ایک کے بعد ایک سامنے آنے لگے ہیں۔

ذرائع کے مطابق رمضان شوگر ملز کا ریفرنس مکمل کر لیا گیا جس میں شہباز شریف اور ان کے صاحبزادے حمزہ شہباز کو ملزم نامزد کر دیا گیا ہے۔ ریفرنس منظوری کے لئے چیئرمین نیب کو بھجوا دیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق ریفرنس میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ نالے پر پل کی تعمیر میں سرکاری فنڈ استعمال کیا گیا۔

چنیوٹ میں شریف برادران کی رمضان شوگر ملز انتظامیہ نے سروے کا بہانہ بنایا اور اندر کھاتے غیرقانونی نالے کی تعمیر کا معاملہ دبانے کے لئے دیہاتیوں کی حمایت حاصل کرنے کی کوشش کی لیکن ان کی سب تدبیریں ناکام ہو گئیں۔ دیہاتیوں نے سروے ٹیم کے 11 افراد کو گرفتار کروا دیا۔

زیر حراست افراد نے پولیس کے سامنے اعتراف کیا کہ انہیں غیر قانونی نالے کی حمایت میں بیان پر دستخط کروانے کیلئے بھیجا گیا ،اصل معاملہ یہ ہے کہ شریف برادران کی شوگر ملز کیلئے نالے کی تعمیر پر عوام کے کروڑوں روپے خرچ کئے گئے اور اب نیب کے شکنجے سے بچنے کیلئے حربے استعمال کئے جا رہے ہیں۔ سروے ٹیم کے سپروائزر اب بھی آنکھوں میں دھول جھونک رہے ہیں ۔

دیہاتیوں نے اس ہیرا پھیری اور دھوکہ دہی پر ڈی پی او آفس کےسامنے احتجاجی مظاہرہ کیا اور ذمہ داران کے خلاف قانونی کارروائی کی استدعا کی۔

چیئرمین نیب کی منظوری کے بعد ریفرنس عدالت میں دائر کیا جائے گا۔ نوازشریف اور شہبازشریف  پہلے ہی کوٹ لکھپت جیل میں قید ہیں۔ اب رمضان شوگر ملز کیس میں شہبازشریف کیساتھ حمزہ شہباز کو بھی ملزم نامزد کیا گیا ہے۔



تازہ ترین ویڈیوز

Oops, something went wrong.