رانا ثناء اللہ کی جائیدادوں کی تحقیقات بھی شروع

رانا ثناء اللہ ‏ لاہور ‏ ‏92 نیوز ‏ منشیات کیس ‏ فیصل آباد ‏
۰۶ جولائی, ۲۰۱۹ ۵:۵۱ شام

لاہور ( 92 نیوز ) منشیات کیس کے الزام میں قید رانا ثناء اللہ کی جائیدادوں کی تحقیقات بھی شروع کر دی گئیں، اے این ایف ملزم کی جائیدادوں کی تحقیقات کر رہی ہے ۔

فیصل آباد میں مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما اور ایم این اے رانا ثناء اللہ  کی منشیات کیس میں گرفتاری کے بعد مزید گرفتاریاں عمل میں لائی جا رہی ہیں، سابق یو سی چیئرمین سمیت مزید چار افراد کو حراست میں لے لیا گیا ہے، دو روز میں گرفتار افراد کی تعداد چھ ہو گئی ہے۔

ادھر منشیات کیس کے الزم میں قید رانا ثناء اللہ کی جائیدادوں کی تحقیقات بھی شروع ہو گئی ہیں ، اے این ایف نے ملزم رانا ثنااللہ کی جائیدادوں کی تحقیقات شروع کر دیں۔

رانا ثناءاللہ منشیات کیس  میں  لاہور سے ڈی ایس پی ملک خالد کو حراست میں لے لیا گیا جبکہ پنجاب پولیس کے ایک ایس ایس پی کی گرفتاری کیلئے بھی آئی جی سے رجوع کرلیا گیا۔

ملک خالد نے طویل عرصہ بطور اسپیشل پروٹیکشن یونٹ ڈی ایس پی فیصل آباد میں ڈیوٹی سرانجام دی اور رانا ثناء اللہ کے قریبی ساتھی سمجھے جاتے ہیں۔

اے این ایف نے ایک ایس ایس پی کی گرفتاری کے لیے بھی آئی جی پنجاب سے رجوع کر لیا اور مختلف مقامات پر چھاپے بھی مارے۔ رانا ثناءاللہ کےحلقے سے ایک سابق یو سی چیئرمین کو بھی حراست میں لے لیا گیا۔

تین ماہ قبل اے این ایف نے گوجرہ موٹروے انٹرچینج کے قریب گاڑی سے 57 کلو 600 گرام افیون برآمد کی تھی۔ پشاور کا رہائشی اسمگلر محمد رفیق گرفتار ہوا تھا جس نے رانا ثناء اللہ سے متعلق اہم انکشافات کیے تھے۔

انٹرنیشنل منشیات فروش محمد رفیق خان بادشاہ خان کے نام سے مشہور ہے، وزیِر انسدادِ منشیات شہریار آفریدی نے بھی گزشتہ روز پریس کانفرنس میں بڑی گرفتاری کا ذکر کیا تھا۔

تازہ ترین ویڈیوز