دنیا بھر میں سیلفی لینے کے دوران حادثات میں اضافہ

دنیا سیلفی حادثات اضافہ
۲۸ جون, ۲۰۱۹ ۴:۵۰ شام

  نیو دہلی (92 نیوز) دنیا بھر میں سیلفی لینے کے دوران حادثات میں اضافہ ہو گیا۔ سیلفی لیتے ہوئے ہلاک افراد کی تعداد شارک حملوں میں مارے جانے والوں سے 5 گنا زیادہ ہو گئی۔

بھارتی جریدہ” جرنل آف فیملی میڈیسن اینڈ  پرائمری کیئر “کی تحقیق کے مطابق  اکتوبر 2011 سے نومبر2017 تک  سیلفی لیتے ہوئے 259 افراد ہلاک ہوئے ۔ اسی عرصے میں 50 افراد  شارک کے حملوں میں مارے گئے ۔

ریسرچ کے مطابق سیلفی لیتے ہوئے ہلاک ہونے والوں کی اوسط عمر تئیس سال ہے، ان میں 72 اعشاریہ 5 فیصد لڑکے اور 27 اعشاریہ 5 فیصد لڑکیاں شامل ہیں ۔

صرف بھارت میں 2011 سے 2017 تک 159 افراد ہلاک ہوئے ۔ کئی واقعات میں کبھی کوئی نوجوان کسی ٹرین کے سامنے سیلفی لیتے ہوئے حادثے کا شکار ہو گیا تو کبھی سیلفی لیتے وقت کشتی کے ڈوب جانے سے ہلاکت ہوئی۔ اتنی بڑی تعداد میں اموات کے بعد حکومت کو کچھ ایسے جگہیں مختص کرنا پڑیں جہاں سیلفی لینے کی اجازت نہیں۔

رپورٹ کے مطابق بھارت کے بعد سب سے زیادہ روس میں 16 نوجوان سیلفی لیتے ہوئے ہلاک ہوئے۔ تیسرے نمبر پر امریکا اور پاکستان ہیں جہاں سیلفی لینے کے جنون میں چودہ چودہ افراد موت کے منہ میں چلے گئے۔

تازہ ترین ویڈیوز