دادو اور جھل مگسی کے بیشتر علاقوں میں پاک فوج کا امدادی آپریشن جاری


پاک فوج ، دادو ، بارشوں اور سیلابی ریلے ، متاثرہ علاقوں ، امدادی سرگرمیوں ، مصروف ، آئی ایس پی آر ، راولپنڈی ، 92 نیوز
09 اگست, 2020 11:27 دن

راولپنڈی (92 نیوز) سندھ کے ضلع دادو میں طوفانی بارشیں، سیلابی ریلوں کے باعث نقصانات، پاک ا فواج کی ٹیمیں متاثرہ علاقوں میں امدادی سرگرمیوں میں مصروف ہیں۔سیلاب میں محصور ہندو خاندانوں کے تحفظ کیلئے 8 گھنٹے طویل آپریشن کیا گیا۔

صوبہ سندھ میں طوفانی بارشیں اور سیلابی ریلوں کی تباہ کاریاں، نئی گاج ڈیم کے سیلابی ریلے اور بند ٹوٹنے سے ضلع دادو سب سے زیادہ متاثر ہوا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق ضلع دادو میں طوفانی بارشوں، سیلابی ریلے کے باعث بھاری نقصان ہوا۔ دادو اور جھل مگسی کے بیشتر علاقوں میں امدادی آپریشن جاری ہے۔ پاک آرمی اور پاک بحریہ کی ٹیمیں سول انتظامیہ کیساتھ امدادی کارروائیوں میں مصروف عمل ہیں۔ ایک ہزار سیلاب متاثرہ افراد میں گرم کھانا تقسیم کیا گیا ہے۔

آرمی انجنیئرکی کشتیاں سیلابی ریلے میں محصور افراد کو محفوظ مقامات پر منتقل کر رہی ہیں۔ متاثرین کو میڈیکل کیمپس میں طبی امداد فراہم کی جا رہی ہے۔

پاک فوج کے امدادی آپریشن کے بعد جھل مگسی، گنداوا آبادی کو باہم منسلک، پاسی پل ہر قسم کی ٹریفک کیلئے کھول دیا گیا۔ کوسٹل ہائی وے بھی باہم منسلک کر دی گئی۔

این 65 شاہراہ پانی کی بلند سطح کے باعث بی بی نانی پل اور پنجاری پل کے مقام پر بند ہے۔ بی بی نانی پل کے پاس مرکزی گیس پائپ لائن کو بھی نقصان پہنچا جبکہ شدید بارشوں، سیلابی ریلے کے باعث کوئٹہ،جیکب آباد، گوادر، کراچی اور سبی، کوہلو شاہراہیں کئی مقامات پر ٹریفک کیلئے بند ہیں۔

سندھ کے ضلع دادو میں سیلابی صورتحال سے نمٹنے کیلئے جاری آپریشن بین المذاہب ہم آہنگی اور پاکستانی شہریوں میں کمال مساوات کی عظیم مثال بن گیا۔ سیلابی پانی میں گھری ہندو آبادی کو بھی یکساں احترام دیا گیا، تمام ہندو خاندان بحفاظت، محفوظ مقامات پر منتقل کئے گئے۔ طبی امداد، خوراک اور دیگر سہولیات فراہم کی گئیں۔

آئی ایس پی آر کے مطابق وانگو کی پہاڑیوں پر محصورہندو خاندانوں کے تحفظ کیلئے 8 گھنٹے طویل آپریشن کیا گیا۔۔ثابت ہو گیا پاکستان سب کا دیس، بین المذاہب ہم آہنگی کا گہواہ،ہندو ہو یا مسلمان، ہرپاکستانی قابل احترام ، ہر شہری برابرہے۔

تازہ ترین ویڈیوز