جعلی اکاؤنٹس کیس ، مراد علی شاہ اور قائم علی شاہ کیخلاف نیب کا گھیرا تنگ ہو گیا


دادو ‏
۰۳ جون, ۲۰۱۹ ۳:۲۷ شام

راولپنڈی ( 92 نیوز) جعلی اکاؤنٹس کیس میں اہم پیشرفت ہوئی ہے ،  دادو اور ٹھٹھہ شوگرملز کی فروخت کے حوالے سے  انکوائری انویسٹی گیشن میں تبدیل کر دی گئی ، چیئرمین نیب نے منظوری دے دی ،عید کے بعد گرفتاریوں کا امکان ہے ۔

جعلی اکاؤنٹس کیس میں  نیب راولپنڈی نے اہم شواہد ملنے پردادو اور ٹھٹھہ شوگر ملز کیس کو انکوائری سے تحقیقات میں تبدیل کر دیا، نمرمجید کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے کیس میں اسلام آباد ہائی کورٹ نے نیب سے جواب طلب کرلیا،احتساب عدالت نے 4 ملزمان کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع کردی۔

سندھ کے موجودہ اور سابق وزرائے اعلیٰ مرادعلی شاہ اورقائم علی شاہ کی مشکلات بڑھنے لگیں، دادو اور ٹھٹھہ شوگر ملزکیس میں اہم شواہد نیب راولپنڈی کے ہاتھ لگ گئے۔

ذرائع کے مطابق چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کی منظوری کے بعد دادو اور ٹھٹھہ شوگز ملز کیس کوانکوائری سے تحقیقات میں تبدیل کر دیا گیا۔

اومنی گروپ کے خواجہ نمر مجید کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست پر سماعت اسلام آباد ہائی کورٹ کے جج جسٹس عامرفاروق نے کی ، عدالت نے نیب کے تفتیشی افسر سے جواب طلب کرتے ہوئےسماعت عید کی چھٹیوں کے بعد تک ملتوی کردی۔

جعلی بینک اکاؤنٹس کیس کے ملزمان داؤدی مورکاس،آصف محمود،سید عارف علی اور خورشید انور جمالی کو جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پراحتساب عدالت میں پیش کیا گیا۔

احتساب عدالت نے ملزم داؤدی مورکاس کا 13 جون اور دیگر 3 ملزمان کا 14 جون تک جسمانی ریمانڈ منظورکرلیا۔

ٹھٹھہ واٹر سپلائی ریفرنس میں 13 ملزمان میں سے 2 ملزمان حسن علی میمن اور ہریش احتساب عدالت میں پیش ہوئے۔ عدالت نے باقی ملزمان کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواستیں منظورکرلیں، دوبارہ سماعت 17 جون کو ہوگی۔

تازہ ترین ویڈیوز