جج شوکت عزیز صدیقی کا اپنی برطرفی کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنیکا فیصلہ

۱۲ اکتوبر, ۲۰۱۸ ۳:۴۶ شام

اسلام آباد (92 نیوز) اسلام آباد کے بر طرف جج جسٹس شوکت عزیز نے اپنی برطرفی  کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ وکلاء سے مشاورت مکمل کر لی۔ پیر کو برطرفی کا نوٹیفکیشن چیلنج کیا جائے گا۔

جوڈیشل کونسل کے فیصلے کی تحریری کاپی 92 نیوز نے حاصل کر لی۔

39 صفحات پر مشتمل فیصلہ جسٹس آصف سعید کھوسہ نے تحریر کیا جس میں قرار دیا کہ جسٹس شوکت صدیقی نے کونسل پر جانبدار  ہونے  کا موقف اپنایا۔ اعلی عدلیہ کیخلاف نفرت انگیز تقریر کی، الزامات عائد کیے، چیف جسٹس صاحبان کی آزادی اور تشخص  عوام میں  خراب کیا لیکن دفاع میں کچھ پیش نہیں کیا۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ نے آئی ایس آئی  کے دباو سے متعلق شوکت عزیز صدیقی کے الزامات کی نفی کی۔ فیصلے میں سوالات اٹھائے گئے ہیں کہ شوکت عزیز صدیقی اپنے گھر پر فوجی افسران سے کیوں ملے؟۔ چیف جسٹس کو ملاقات سے آگاہ کیوں نہیں کیا گیا ؟۔ فوجی افسران کیخلاف توہین عدالت کی کارروائی کیوں نہیں کی؟۔

تازہ ترین ویڈیوز