بابری مسجد کیس، فیصلے سے قبل ضلع فیض آباد میں دفعہ 144 نافذ

بابری مسجد کیس، فیصلے سے قبل، ضلع فیض آباد، دفعہ 144 نافذ، اتر پردیش ، 92 نیوز
۱۵ اکتوبر, ۲۰۱۹ ۵:۳۱ دن

اتر پردیش (92 نیوز) بھارتی ریاست اتر پردیش ضلع فیض آباد ایودھیا میں تاریخی بابری مسجد کیس کے فیصلے سے قبل دفعہ 144 نافذ کر دی گئی ہے۔ کیس کی سماعت کا یہ آخری ہفتہ ہے، توقع کی جارہی ہے کہ چیف جسٹس کی ریٹائرمنٹ سے قبل بابری مسجد کیس کا فیصلہ سنا دیا جائے، جن کے عہدے کی مدت 17 نومبر کو مکمل ہو رہی ہے۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق سپریم کورٹ میں بابری مسجد کیس کی سماعت چیف جسٹس رنجن گوگوئی کی سربراہی میں 5 رکنی بنچ کر رہا ہے۔ مسلمانوں کی طرف سے سینئر ایڈووکیٹ راجیو دھون نے دلائل دئیے اور کہا کہ کیا وجہ ہے کہ کیس کی سماعت کے دوران صرف مسلمانوں سے ہی سوال کیے جارہے ہیں اور مخالف ہندو فریق سے کچھ نہیں پوچھا گیا۔

سماعت کے دوران ایڈوکیٹ راجیو دھون نے دلائل دیے کہ متنازع بنائی گئی زمین ہمیشہ مسلمانوں کے پاس رہی ہے، 1989 سے پہلے ہندو فریق نے کبھی زمین کے مالکانہ حقوق کا دعویٰ نہیں کیا۔

دوسری طرف بابری مسجد کیس کے متوقع فیصلے سے قبل سیکیورٹی خدشات کے پیش نظر ضلع ایودھیا میں دفعہ 144 نافذ کر دی گئی ہے، جو 10 دسمبر تک برقرار رہے گی۔

تازہ ترین ویڈیوز