ایم ٹی آئی ایکٹ کے خلاف ڈاکٹرز اور پیرامیڈیکل اسٹاف سراپا احتجاج


ایم ٹی آئی ایکٹ ، ڈاکٹرز ، پیرامیڈیکل ، اسٹاف ، سراپا ، احتجاج
۲۸ ستمبر, ۲۰۱۹ ۳:۴۲ شام

 پشاور (92 نیوز) ایم ٹی آئی ایکٹ کے خلاف ڈاکٹرز اور پیرامیڈیکل اسٹاف سراپا احتجاج بن گئے۔ مختلف شہروں میں ڈاکٹروں اور دیگر طبی عملے نے احتجاجی مظاہرے کیئے۔

صوبے میں سرکاری اسپتالوں اور مراکز صحت کی نگرانی کےلئے ریجنل اینڈ ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹیز کے قیام کا بل گرینڈ ہیلتھ الائنس اور حکومت کے درمیان نیا وجہ تنازعہ بنا۔ بل خیبرپختونخوا اسمبلی میں پیش ہونے پر ڈاکٹرز اور دیگر طبی عملہ بپھر گیا۔ گزشتہ روز پولیس نے ڈاکٹروں کے احتجاج کو سختی سے کچلنے کی کوشش کی۔

ایل آر ایچ کو میدان جنگ بنانے، ڈاکٹروں اور پولیس اہلکاروں کے زخمی، پندرہ ڈاکٹرز رہنمائوں کی گرفتاری کے بعد احتجاج کا رخ صوبائی اسمبلی کی جانب موڑ دیا گیا۔ ڈاکٹرز باہر احتجاج کرتے رہے جبکہ ایوان نے بل منظور کرلیا۔ بل کی منظوری، پولیس تشدد اور گرفتاریوں کے خلاف ڈاکٹروں نے احتجاج جاری رکھنے کا اعلان کیا۔

گرینڈ ہیلتھ الائنس نے آج سے غیرمعینہ مدت کے لئے صوبے کے تمام سرکاری اسپتالوں میں او پی ڈی اور پرائیویٹ کلینکس بھی بند رکھنے کا اعلان کیا۔

گرینڈ ہیلتھ الائنس کے گرفتار رہنمائوں کی رہائی کے لئے چوبیس گھنٹوں کی مہلت دی۔ ورنہ ایمرجنسی سروسز بھی بند کرنے کی دھمکی بھی دی ہے۔

تازہ ترین ویڈیوز