ایف بی آر بجلی کمرشل میٹر مالکان سے ٹیکس وصولی میں ناکام

نیوز, اسٹیٹس کو ‏, اسلام آباد ‏, ایف بی آر افسران ‏, ایف بی آر افسران, پارلیمنٹ ‏, پاکستان ریونیو اتھارٹی, ٹیکس مشینری ‏, چیئرمین شبر زیدی ‏, صدارتی آرڈیننس ‏, وزیراعظم ‏
۱۷ نومبر, ۲۰۱۹ ۹:۰۳ شام

اسلام آباد (92 نیوز) ایف بی آرکوبجلی کے کمرشل میٹروں کے مالکان سے ٹیکس وصول کرنے میں ناکامی کا سامنا۔ لاکھ 7ہزار 512  کمرشل میٹر مالکان کو نوٹس جاری کیے گئے، صرف  227 کا جواب آیا۔

رواں مالی سال کی سہ ماہی میں نوٹسوں کی بنیاد اضافی 500ارب روپے اکھٹے نہ ہوسکے۔ ایف بی آر کی جانب سے 1 لاکھ 7ہزار 512 کمرشل میٹر مالکان کونوٹس جاری کیے گئے لیکن  صرف 227 کا جواب ملا۔

چالیس ہزار سرکاری اداروں کو بھی کمرشل میٹروں پر نوٹس جاری کیے گئےتھے۔ نوٹس کے ذریعے بجلی کے کمرشل میٹر ہولڈرز کو رجسٹریشن کی ہدایت کی گئی تھی۔ 3 ماہ گزرنے کے باوجود 1 فیصد سے بھی کم بزنس مینوں اور سرکاری اداروں نے جواب داخل کرایا۔

نوٹسوں کا جواب نہ ملنے پر آئی ایم ایف سے کیا گیا معاہدہ کھٹائی میں پڑ گیا۔۔ آئی ایم ایف سے رواں مالی سال کی سہ ماہی میں نوٹسوں کی بنیاد اضافی 500ارب روپے سیلز ٹیکس جمع کرنے کا وعدہ کیا گیا تھا۔۔

سیلز ٹیکس رجسٹریشن آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدے میں ٹیکس دستاویزی عمل کا سب سے بڑا ذریعہ قرار دیا گیا تھا۔ گزشتہ ہفتے آئی ایم ایف نے قرضے کی قسط  جاری کرتے ہوئے اس ناکامی پر تحفظات کا اظہار کیا تھا۔

تازہ ترین ویڈیوز