اکرم درانی کیخلاف غیر قانونی بھرتیوں کا کیس بھی کھل گیا


سابق وفاقی وزیر اکرم درانی غیر قانونی بھرتیوں کا کیس اسلام آباد ‏ ‏92 نیوز گھیرا مزید تنگ ‏ چیف ایڈمن آفیسر ‏ پی ڈبلیو ڈی ‏ مختاربادشاہ خٹک ‏ عاطف ملک ‏ جسمانی ریمانڈ ‏ جے یوآئی (ف) ‏
۱۷ اکتوبر, ۲۰۱۹ ۲:۵۵ شام

اسلام آباد ( 92 نیوز) سابق وفاقی وزیر اکرم درانی کے خلاف گھیرا مزید تنگ ہو گیا ،  آمدن سے زائد اثاثوں کے بعد غیرقانونی بھرتیوں کا کیس بھی کھل گیا ۔ چیف ایڈمن آفیسر پی ڈبلیو ڈی مختاربادشاہ خٹک اور عاطف ملک گرفتار  ہو گئے جب کہ ملزمان 13 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے  کر دیے گئے ۔

جے یوآئی (ف) کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر ہاؤسنگ اکرم درانی کی مشکلات میں مزید اضافہ ہو گیا۔

نیب راولپنڈی نے غیر قانونی بھرتیوں کے الزام میں گرفتار چیف ایڈمن آفیسر پی ڈبلیو ڈی مختاربادشاہ خٹک اور عاطف ملک  کو احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کے روبرو پیش کیا گیا۔

نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کوبتایا کہ چیف ایڈمن آفیسر پی ڈبلیو ڈی مختاربادشاہ خٹک نے غیر قانونی بھرتیوں میں اہم کردار ادا کیا ، عاطف ملک نے جعلی دستاویزات بنا کر معاونت کی ۔ملزمان نے جعلی ڈومسائل بنا کر لوگوں کو بھرتی کیا ۔ ملزمان اکرام درانی سے ملتے رہے ہیں، یہ دیکھنا ہے اکرام درانی کا کیا رول ہے۔

نیب پراسیکیوٹر نے ملزمان  کے 14 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی۔ عدالت نے 13 روزہ جسمانی ریمانڈ پرملزمان کو نیب کے حوالے کردیا ، واضح رہے کہ اکرم درانی کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں کا کیس بھی زیر سماعت ہے۔

تازہ ترین ویڈیوز