اپوزیشن حربوں سے این آر او چاہتی ہے ، وزیر اعظم عمران خان


اپوزیشن
۱۵ جنوری, ۲۰۱۹ ۱۰:۱۶ دن

اسلام آباد ( 92 نیوز)  اپوزیشن  کے واک آؤٹ سے متعلق وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ اپوزیشن حربوں کے ذریعے این آر او چاہتی ہے ۔

وزیر اعظم نے اپنے ٹویٹ میں لکھا کہ ہر سال پارلیمنٹ پر عوام کے ٹیکس سے اربوں روپے خرچ ہوتے ہیں، اپوزیشن کی جانب سے قومی اسمبلی سے واک آؤٹ سمجھ سے بالاتر ہے، کیا عوام نے صرف واک آؤٹ کیلئے انہیں منتخب کیا ہے۔

وزیر اعظم نے اپوزیشن پر تنقید کرتے ہوئے ٹویٹ میں لکھا کہ  اپوزیشن ان حربوں سے حکومت کو دباؤ میں لاکر این آر او چاہتی ہے، یہ چاہتے ہیں نیب کیسز بند کئے جائیں۔

وزیر اعظم نے کچھ دیر بعد ایک اور ٹویٹ کیا اور کہا کہ  کیا جمہوریت منتخب سیاسی رہنماؤں کو کرپشن اور لوٹ مار کی کھلی چھوٹ کا نام ہے؟، یوں محسوس ہوتا ہےان کے نزدیک  جو شخص عوام کے ووٹ لے کر منتخب ہوجائے، اسے  قومی خزانے پر ڈاکہ زنی کا لائسنس مل جاتا ہے۔

گزشتہ روز قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران  حکومتی نشست سے ’’چور کا بچہ ‘‘  کی آواز پرشہباز شریف برہم  ہو گئے  تھے ۔ ان کا کہنا تھا کہ  گالم گلوچ بہت سن چکا ایوان میں نہیں بیٹھ سکتا ، اپوزیشن لیڈر نے مائیک پر کہا گالی نہیں سنوں گا اور ایوان سے چلے گئے ۔

اس موقع پر حکومتی اتحادی جماعت ق لیگ کے رکن طارق بشیر چیمہ اٹھے اور کہایہ اپنی بات کرکے گالم گلوچ کا الزام لگا کر چلے گئے ،یہ کیا طریقہ ہے۔آج کے بعد ہم انہیں کبھی اس طرح بات نہیں کرنے دیں گے ۔

اس کے بعد خواجہ آصف اٹھے اور بولے ایسی دھمکی سے ایوان نہیں چلے گا ،یہاں نہ وزیراعظم آتا ہے نہ وزیرخزانہ۔

تازہ ترین ویڈیوز