اورنج لائن میٹرو ٹرین میں اربوں کی کرپشن کا انکشاف


اورنج لائن میٹرو ٹرین ، غیر ملکی فنڈنگ ، 21 منصوبوں ، کرپشن ، انکشاف
31 جنوری, 2020 3:58 شام

 لاہور (92 نیوز) ملک کے سب سے بڑے صوبے پنجاب میں کرپشن کی طویل داستانوں کا سلسلہ جاری  ہے۔ فلاح عامہ کے منصوبے اورنج لائن میٹرو ٹرین سمیت غیر ملکی فنڈنگ سے شروع ہونے والے 21 منصوبوں میں اربوں کی کرپشن منظر عام پر آ گئیں۔

آڈٹ رپورٹ 2018-19 نے سابقہ دور میں کیے جانے والے معاہدوں کا کچا چٹھا کھول کر رکھ دیا۔ پنجاب اسمبلی میں جمع کروائی گئی رپورٹ میں کیے گئے  انکشافات نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا۔

رپورٹ کے مطابق ورلڈ بینک، ایشین ڈویلپمنٹ بینک، چائنہ ایگزم بینک اور جائیکا لون سمیت غیر ملکی فنڈ سے شروع کیے جانے والے منصوبوں میں 2 بلین سے زائد کی کرپشن ہوئی ۔

آڈٹ رپورٹ کے مطابق 21 منصوبوں کے لیے غیر ملکی بینکوں اور فرمز نے پنجاب حکومت کو 10 ارب سے زائد کے فنڈز جاری کیے جن میں غیر ملکی فنڈ میں سے 2 ارب 29 کروڑ 30 لاکھ 94 ہزار روپے کی خرد برد ہوئی۔

آڈٹ رپورٹ کے مطابق مہنگے ٹھیکے، لانگ روٹس اور انکم ٹیکس کی عدم وصولی کے باعث خزانے کو نقصان پہنچا جبکہ فنڈنگ لے کر درست استعمال نہ کرنے کے باعث غیر ملکی بینکوں کو فالتو انٹرسٹ بھی ادا کرنا پڑا۔

غیر ملکی فنڈڈ منصوبوں میں ٹرانسپورٹ، آبپاشی، انرجی اور سیاحت سے متعلقہ منصوبے شامل ہیں۔

تازہ ترین ویڈیوز