انٹرنیشنل کمیشن آف جیورسٹس کی بھارتی اقدام کی مذمت


انٹرنیشنل کمیشن آف جیورسٹس کی بھارتی اقدام کی مذمت
۰۷ اگست, ۲۰۱۹ ۱۰:۰۴ دن

نیو یارک ( 92 نیوز) انٹرنیشنل کمیشن آف جیورسٹس  نے مقبوضہ کشمیر کی آئینی حیثیت ختم کرنے کے بھارتی اقدام کی مذمت کر دی ۔ تنظیم کا کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیرکی آزادحیثیت کے خاتمے سے  انسانی حقوق کےبحران میں شدت آئےگی۔ بھارتی اقدام قانون کی بلادستی اورانسانی حقوق پرضرب ہے، بھارتی حکومت کا اقدام آئین اور قانون کی شدید خلاف ورزی ہے۔

انٹرنیشنل کمیشن آف جیورسٹس  ( آئی سی جے ) کےمطابق  مقبوضہ کشمیرکی آزادحیثیت کے خاتمے سے انسانی حقوق کے بحران میں شدت آئے گی ،مقبوضہ کشمیر کے باسیوں پر ڈریکونین پابندیاں لگائی گئی ہیں، بھارتی حکومت کا اقدام آئین اور قانون کی شدید خلاف ورزی ہے ،بھارتی سپریم کورٹ کو اس کا بغور جائزہ لینا چاہیے۔

ایک بیان میں آئی سی جے کے سیکرٹری جنرل سیم ظریفی کا کہنا تھا کہ بھارت اقدام قانون  کی بالادستی اور انسانی حقوق پر ضرب ہے۔اس سے مقبوضہ کشمیر کی آزادحیثیت کاخاتمہ اور انسانی حقوق کےبحران میں شدت آئےگی جبکہ  واحدمسلم اکثریتی ریاست کادرجہ متاثر ہوگا ۔

سیکرٹری جنرل انٹرنیشنل کمیشن آف جیورسٹس سیم ظریفی
سیکرٹری جنرل انٹرنیشنل کمیشن آف جیورسٹس سیم ظریفی

انہوں نے کہا کہ بھارتی سپریم کورٹ کو  قانو اور آئین کی اس خلاف ورزی کا بغور جائزہ لینا چاہیے ،مظاہرے روکنے کیلئے فوج کی تعدادمیں اضافہ اور کمیونی کیشن بلیک آؤٹ کیا گیا جبکہ سیاسی رہنماؤں کو نظر بند کیا گیا۔

سیم ظریفی نے مودی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ  اقوام متحدہ کےانسانی حقوق کمشنرکی سفارشات پر عمل کرتے ہوئے کشمیریوں کی خودمختاری کےاحترام کرے۔

تازہ ترین ویڈیوز

Oops, something went wrong.