کیمیائی پروگرام تباہ نہیں ہوا،شام نےٹرمپ کادعویٰ مسترد کردیا

۱۵ اپریل, ۲۰۱۸ ۵:۵۰ شام

دمشق ( 92 نیوز ) شامی حکام نے  ٹرمپ کا کیمیائی پروگرام تباہ  کرنے کا دعویٰ مسترد کرتے ہوئے کہا کہ  کیمیائی پروگرام تباہ نہیں ہوا۔شام کے ریسرچ سینٹر کے سربراہ سعید کے مطابق فارما سیوٹیکل اورکیمیکل انڈسٹری اپنا کام کر رہی ہیں ۔امریکی صدر نے شام پر حملےکےدوران کیمیائی ہتھیاروں کا پروگرام تباہ کرنےکااعلان کیاتھا۔

شامی حکام نے امریکی صدر ٹرمپ کا دعویٰ مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی اتحاد کے حملے میں شام کا کیمیائی پروگرام تباہ نہیں ہوا، ریسرچ سینٹر کے سربراہ کہتے ہیں جس سنٹر کو نشانہ بنایا گیا، وہاں کینسر اور کیمیائی حملے سے بچاؤ کی ادویہ تیار  کی جاتی تھیں  ۔

روسی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ شام میں کئی  سالوں بعد امن کی راہ ہموارہوئی تھی ، مگر امریکا، فرانس اوربرطانیہ کے حملوں نے امن عمل کو مزید دشوار کردیا جس سےثابت ہوتاہے کہ امریکامشرق وسطیٰ کوغیرمستحکم کرناچاہتاہے۔

شام پر ہونےوالے حملوں کے خلاف امریکا، برطانیہ اور فرانس میں کئی مقامات پر شام میں حملوں کے خلاف مظاہرے کئے گئے۔

امریکی  صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ اگر شام نے اپنےشہریوں پر مزید کیمیائی حملے کیے تو امریکہ اس پر دوبارہ حملہ کرنے کے لیے ‘پوری طرح تیار ہے’۔

دوسری جانب شامی فوج نےکہا ہےکہ شام میں باغیوں کے آخری گڑھ غوطہ کے مشرقی علاقے پر مکمل طورپرحکومت کی عملداری بحال کر دی گئی ہے۔باغیوں کے زیر قبضہ آخری علاقے دوما کوبھی اب آزاد کرا لیا گیاہے۔

تازہ ترین ویڈیوز