ورلڈ اکنامک فورم نے پاکستان کی ریٹنگ 3 درجے گرا دی

ورلڈ اکنامک فورم ، پاکستان ، ریٹنگ ، 3 درجے ، گرا
۰۹ اکتوبر, ۲۰۱۹ ۹:۱۵ شام

اسلام آباد (92 نیوز) ورلڈ اکنامک فورم نے پاکستان کی ریٹنگ 3 درجے گرا دی۔ 12 کارکردگی اعشاریوں میں سے ادارہ جاتی کارکردگی فہرست میں پاکستان کا نمبر 109 پر آگیا۔

وزیراعظم عمران خان کی اپیلیں، نصیحتیں اور وضاحتیں اپنی جگہ مگر عالمی ادارے کارکردگی کا پول مسلسل کھول رہے ہیں۔

عالمی اقتصادی فورم نے پاکستان کی ریٹنگ 3 درجے گرا دی۔ 12 کارکردگی اعشاریوں میں سے ادارہ جاتی کارکردگی فہرست میں پاکستان کا نمبر 109 پر آگیا۔ انفراسٹرکچر کی بنیاد پر نمبر 93 اور میکرواکنامک درجہ بندی میں  پاکستان 103 نمبر چلا گیا۔

شعبہ صحت میں ناقص کارکردگی 109 اور پیشہ ورانہ مہارت میں  کے شعبے میں تنزلی کرتے ہوئے پاکستان 125 ویں نمبر پر چلا گیا۔ پراڈکٹ مارکیٹ میں 122 اور لیبر مارکیٹ میں  پاکستان کا نمبر121 ہے۔ مالیاتی کارکردگی میں بھی 89 اور مارکیٹ سائز میں پاکستان سکڑتے ہوئے 31 نمبر پر چلا گیا۔

قرضہ لے کر کارکردگی نہ دکھانے پر بھی پاکستان کے حصے میں منفی ریمارکس آئے ۔ ایشیائی  ترقیاتی بنک نے قرضہ لینے والے ممالک کی ریٹنگ جاری کر دی۔

پاکستان کی بیرونی قرضہ لیکر واپس کرنے کی ریٹنگ غیر اطمینان بخش رہی۔ متبادل توانائی کے منصوبوں کے لیے پاکستان نے بھارت کے بعد سب سے زیادہ قرضہ لیا۔ 8 ارب ڈالر قرضہ 2005 تا 2017 کے منصوبوں کیلئے حاصل کیا گیا۔ رپورٹ طریق کار پر عمل میں ناکامی کے باعث قرضہ کم ہو کر 6.2 ارب ڈالر کردیا گیا۔ ایشیائی ترقیاتی بینک کی رپورٹ کےمطابق پاکستان کی پروگرام پرفارمنس ریٹنگ بھی غیر اطمینان بخش رہی۔

تازہ ترین ویڈیوز