Mobile App Live TV Careers
23
May

قومی اسمبلی: فاٹا اصلاحات،لوڈ شیڈنگ معاملے پر ایوان میں گرما گرمی

May 18, 2017 18:52 pm

national-assembly

اسلام آباد(92نیوز)فاٹا اصلاحات اور لوڈشیڈنگ کے معاملے پر قومی اسمبلی کے اجلاس میں گرما گرمی ہوگئی، اسپیکر نے شاہ جی گل آفریدی کو ایوان سے باہر پھینکوانے کی دھمکی دے دی، خواجہ آصف نے  عائشہ گلا لئی کو چور قرار دے دیا جواباً اپوزیشن بھی چور چور کے نعرے لگاتی واک آؤٹ کرگئی۔

تفصیلات کےمطابق قومی اسمبلی کے ہنگامہ خیز اجلاس میں  اپوزیشن نے فاٹا اصلاحات اور لوڈشیڈنگ کے معاملے پر حکومت کو خوب آڑے ہاتھوں لیا۔ اپوزیشن لیڈرخورشید شاہ نے فاٹا اصلاحات آئینی بل پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ایک رکن نے جذباتی ہوکر بل کی مخالفت کی تو اس پر پیش رفت ہی روک دی گئی حکومت فاٹا کو لالی پاپ دے رہی ہے ۔ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ حکومت پہلے اتحادیوں کو تو اعتماد میں لےمحمودخان اچکزئی نے ایک بار پھرآئینی بل کی مخالفت کی تو فاٹا سے رکن اسمبلی شاہ جی گل آفریدی انہیں ٹوکنے لگےوارننگ پر بھی بھی خاموش نہیں ہوئے تو سپیکر نے انہیں باہر پھنکوانے کی دھمکی دے دی یہی نہیں سپیکر نے مداخلت کرنے پر شیریں مزاری کو بھی وارننگ دی یہ معاملہ ابھی ٹھنڈا نہیں ہوا تھا کہ خیبرپختونخوا میں لوڈشیڈنگ کا ذکر چھڑ گیا ۔ وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف نے تحریک انصاف کی ایم این اے عائشہ گلالئی کو چور کہہ دیاجواب میں تحریک انصاف کے ارکان نے بھی ”چور ۔چور “کے نعرے لگادیئے۔ خواجہ آصف کے ریمارکس پراپوزیشن ارکان واک آﺅٹ بھی کر گئے۔ اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ کاکہنا تھا کہ بجلی تو لاہورمیں بھی چوری ہورہی ہےوہ کیوں نظر نہیں آتی۔ ملک میں ہر جگہ بجلی چوری ہورہی ہے کیا سب کی بجلی بند کر دیں جب ایک دوسرے کو چور کہیں گے تو باہر سے کسی دشمن کی ضرور ت نہیں بعد میں سپیکر نے وفاقی وزیر خواجہ آصف کے الفاظ حذف کردیئے۔

 

 



Comments

comments