نائن الیون کو 18 برس بیت گئے

سانحہ نائن الیون ‏ نیو یارک ‏ ‏92 نیوز ورلڈ ٹریڈ سینٹر ‏ القاعدہ ‏ اسامہ بن لادن ‏
۱۱ ستمبر, ۲۰۱۹ ۱۱:۳۶ دن

نیو یارک ( 92 نیوز) سانحہ نائن الیون کو 18 برس بیت گئے، نیویارک  کےورلڈ ٹریڈ سینٹر کیساتھ دو جہازوں کے ٹکرانےسے تین ہزار سے زائد افراد ہلاک اور چھ ہزار سے زائد زخمی ہوگئے تھے،اس حملے کا ذمہ دار القاعدہ اور اسامہ بن لادن کو ٹھہرایا گیاتھا۔

نائن الیون امریکا کیلئے ایک بھیانک خواب ہے ، 11 ستمبر 2001 کا سورج امریکی عوام کیلئے قیامت بن کر طلوع ہوا، سپرپاور کہلانے والے ملک کے چار مسافر طیارے فضا میں بلند ہوتے ہی ہائی جیک کرلیے گئے۔

دہشتگردوں نے دو طیارے یکے بعد دیگرے نیویارک کے ورلڈ ٹریڈ سنٹر سے ٹکرا دیے، دنیا کی بلند و بالا عمارت دیکھتے ہی دیکھتے ملبے کا ڈھیر بن گئی۔

تیسرا مغوی طیارہ امریکی محکمہ دفاع کی عمارت پینٹاگون سے ٹکرایا جبکہ چوتھا پنسلوینیا کے جنگل میں گر کر تباہ ہوا۔

امریکی تاریخ کے اس خونی ترین حملے میں 17 ہائی جیکرز سمیت 2996 افراد لقمہ اجل بنے جبکہ زخمیوں کی تعداد چھ ہزار سے زائد تھی ، اس کے ساتھ ہی امریکی معیشت کو بھی دس ارب ڈالرز سے زائد کا نقصان اٹھانا پڑا۔

امریکا نے حملوں کا الزام القاعدہ اور اس کے سربراہ اسامہ بن لادن پر عائد کیا جس کی تلاش  میں ایک ماہ بعد ہی افغان سرزمین پر میزائلوں کی برسات کردی گئی۔

بدلے کی آگ سے شروع ہونے والی اس جنگ کو دہشتگردی کے خلاف جنگ قرار دیا گیا جس نے پاکستان سمیت پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لیا ۔ افغانستان اور عراق سمیت متعدد ممالک کو کھنڈرات کا ڈھیر بنا ڈالا۔

گوانتا نامو بے اور ابوغریب جیسے بدنام زمانہ عقوبت خانے بھی وجود میں آئے ، جہاں امریکی فوجیوں نے ظلم کی نئی داستانیں رقم کیں۔

پاکستان ،افغانستان اور عراق اس جنگ کے سب سے زیادہ متاثرہ ممالک ہیں،نائن الیون حملوں کی یاد میں امریکا سمیت دنیا بھر میں مختلف تقاریب کا اہتمام کیا جائے گا ۔

تازہ ترین ویڈیوز